پنڈدادنخان

پنڈدادنخان میں شدید گرمی اور حبس میں بجلی کی لوڈشیڈنگ سے بچے بوڑھے خواتین ذہنی اذیت کا شکار

پنڈدادنخان: واپڈا حکام نے عوام کی چیخیں نکلوا دیں ، شدید گرمی اور حبس میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ سے بچے بوڑھے خواتین ذہنی اذیت کا شکار ، بھاری فیسیں وصول کرنے وا لے سکولوں میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کی صورت میں جنریٹر نہ ہی ائیر کنڈیشن کا نظام، گرمی سے بچوں کا برا حال،ذمہ دار افسران نے وضاحت دینے کی بجائے نمبر بند کردیئے۔

تفصیلات کے مطابق ضلع جہلم کے دوسرے بڑے شہر کھیوڑہ اور تحصیل بھر میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ نے عوام کی چیخیں نکلوا دیں تحصیل پنڈدادنخان کئی ماہ سے منٹینیس کی آڑ میں بھی لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری رہا لیکن تاحال معاملات جوں کے توں ہیں پنڈدادنخان لاری اڈا ،محلہ بلوچاں ،کرسچن کالونی کھیوڑہ ،مین مارکیٹ کھیوڑہ سمیت تحصیل بھر کے مختلف علاقوں میں بجلی کے کم وولٹیج اور ٹرپینگ کے باعث ٹرانسفارمر جلنے سے کاروبار معاملات ٹھپ رہتے ہیں جبکہ بجلی سے چلنے والی تنصیبات کا نقصان بھی ہوتا ہے۔

تحصیل بھر کے عوام نے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ اور کم وولٹیج کے مسلہ کو فوری حل کیا جائے اور پنڈدادنخان محکمہ واپڈا کا آڈٹ کروایا جائے کہ منٹینس کے باوجو د ٹرانسفارمروں کا جلنا اور کم وولٹیج کا مسلہ کیوں ہے؟جبکہ شدید گرمی میں سکول جانے والے بچوں کا بھی لوڈشیڈنگ کے باعث برا حال ہے سکول مالکان بھاری فیسیں تو وصول کرتے ہیں لیکن متعدد سکولوں میں شدید گرمی کے باعث چھوٹے بچوں کے لیے لوڈشیڈنگ کی صورت میں پینے کے ٹھنڈے پانی سمیت کوئی خاطرخواہ انتظامات موجود نہ ہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button