سوہاوہاہم خبریں

ٹکٹ نہ ملنے پر راجہ اویس خالد بھی باغی ہو گئے، مسلم لیگ کے امیدواروں کا بائیکاٹ کر دیا

سوہاوہ: ٹکٹ نہ ملنے پر راجہ اویس خالد بھی باغی ہو گئے، مسلم لیگ کے امیدواروں کا بائیکاٹ کر دیا۔ میرا جینا مرنا مسلم لیگ ن کے ساتھ ہے، مسلم لیگ(ن) نہیں چھوڑ رہا لیکن چوہدری ندیم خادم کو نہ سپورٹ کریں گے نہ ووٹ دیں گے ، امیدواروں کے بائیکاٹ کا اعلان کرتے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار سابق ایم پی اے و پارلیمانی سیکرٹری راجہ اویس خالد کا ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ لیگی قیادت کا ٹکٹ نہ دینے کے فیصلہ کو قبول کرتا ہوں ، قیادت کے فیصلہ کے بعد مسلم لیگ ن کے لیے ووٹ دینے کا فیصلہ سوہاوہ کی عوام پر چھوڑتا ہوں، میں اپنے مرحوم والد کے نقش قدم پر چلتے ہوئے مسلم لیگ ن کا کارکن بن کر رہوں گا، میرے قائد میاں نواز شریف ہیں اور ان کا ہر فیصلہ قبول ہے۔

راجہ اویس خالد نے کہا کہ موجودہ لیگی قیادت نے سوہاوہ کو نظر انداز کر کے دوراندیشی کا ثبوت نہیں دیا، میں نے اپنے دور میں کئی بڑے ترقیاتی کام کروائے، اپنے دور میں ایک پیسے کی بھی کرپشن کا الزام نہیں،سابق ایم این نے تحصیل سوہاوہ کو پانچ سال نذر انداز کیا، سابق لیگی ایم این اے نے اپنے فنڈ سے ایک پیسہ تحصیل سوہاوہ پر خرچ نہیں کیا،ضلعی قیادت نے مجھے نذر انداز کر کے سوہاوہ میں عوامی ووٹ کی توہین کی ہے، میں نے اپنے پانچ سالہ دور میں شرافت کی سیاست کی،میں قیادت کے فیصلہ کو تسلیم کرتے ہوئے الیکشن سے دستبردار ہوا مگر پارٹی کے ساتھ ہوں۔

انہوں نے مزید کہا کہ میں وفاداریاں تبدیل کرنے والوں میں سے نہیں،میرے مخالفین پروپیگینڈا کر رہے تھے کہ میں وفاداریاں تبدیل کرنے لگا ان کو مایوسی ہوئی،عوامی رائے ہے کہ میں الیکشن کا بائیکاٹ کروں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button