جہلماہم خبریں

جہلم میں سول ہسپتال کی نرسنگ طالبات نے چھ ماہ سے ماہانہ وظائف نہ ملنے پر احتجاجی مظاہرہ

جہلم: سول ہسپتال کی نرسنگ طالبات نے چھ ماہ سے ماہانہ وظائف نہ ملنے پر احتجاجی مظاہرہ کیا ،پہلے سول ہسپتال سے ہیلتھ آفس تک ریلی نکالی اور پانچ سےچھ گھنٹے تک سول لائن روڈ بند کر کے احتجاج کیا۔

انتظامیہ سے پانچ بار مزاکرات ناکام ہوئے تو نرسنگ سٹوڈنٹس نے جی ٹی روڈ کی طرف مارچ شروع کر دیا اور پھر دو گھنٹے تک جی ٹی روڈ دونوں اطراف سے بلاک رکھا۔

جی ٹی روڈ پر گاڑیوں کی قطاریں لگی تو انتظامیہ کو ایک دفعہ پھر ہوش آئی اور ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر آفاق خان وزیر کو مزاکرات کے لیے بھیجا۔

انتظامیہ نے نرسنگ طالبات کو یقین دہانی کروائی کہ تین روز میں چھ ماہ کے بقایا جات کلیئر ہو جائیں گے جس پر احتجاجی نرسز نے تحریری طور پر معاہدہ کرنے کو کہا اور پھر ڈپٹی کمشنر کے کمیٹی روم میں تحریری یقین دہانی پر نرسز منتشر ہو گئیں اور جی ٹی روڈ ٹریفک کے لیے کھول دیا۔

احتجاج کے دوران بھوک اور پیاس سے ایک طالبہ بے ہوش بھی ہوئی جبکہ نرسنگ پرنسپل نے طالبات کو تشدد کا نشانہ بنا کر زبردستی احتجاج ختم کروانے کی کوشش بھی کی۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button