جہلم

جہلم میں بچوں کی گردنیں کاٹنے کا ڈراپ سین، ماں کے خلاف اقدام قتل کا مقدمہ درج

جہلم: بچوں کی گردنیں کاٹنے کا ڈراپ سین،ماں کے خلاف اقدام قتل کا مقدمہ تھانہ سول لائن میں درج،ماں نے بچوں کو زخمی کرنے کے بعد خودکشی کرنے کی کوشش کی،خاوند کے بروقت گھر پہنچنے کی وجہ سے اور طبی امداد ملنے کی وجہ سے جانی نقصان نہیں ہوا۔

تفصیلات کے مطابق سکندر ٹاؤن کے رہائشی اویس رشید ولد محمد رشید نے ایس ایچ او تھانہ سول لائن کو تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ اس نے تین سال قبل نیلم حسین ولد تجمل حسین سے شادی کی جو کہ طلاق یافتہ تھی اور پہلے خاوند سے اس کی ایک چھ سال کی بچی تھی،اس کے بطن سے میرے دو بچے محمد آذان عمر ڈیڑھ سال اور محمد سبحان عمر چار ماہ پیدا ہوئے۔

میرے علم میں آیا کہ یہ جادو ٹونا کا کام کرتی ہے اسے ایسا کرنے سے منع کیا حسب معمول اپنے کام پر چلا گیا ڈیڑھ بجے دن گھر واپس آیا تو دروازہ اندر سے بند تھا اور بچوں کے رونے کی آوازیں آرہی تھی کافی دیر دروازہ کھٹکھٹانے کے بعد پڑوسیوں کے گھر سے اپنے گھر میں داخل ہوا ،بیٹی امدیکہ اور محمد سبحان کے گلے پر کٹ لگانے کے بعد اپنے گلے پر بلیڈ سے کٹ لگا رہی تھی میں اس کے گلے سے بلیڈ چھین لیا اور گھبرا کر گھر کا دروازہ کھولا میرا شور واویلا سن کر اہل محلہ آگئے۔

محلے داروں کی مدد سے بچوں کو ہسپتال منتقل کیا میرا ایک بیٹا میرے والد کے ساتھ میر پور گیا تھا جو کہ اس کا نشان بننے سے محفوظ رہا،لہٰذا اس نے بچوں کو قتل کرنے اور خود کشی کرنے کی کوشش کی ہے اس کے خلاف سخت سے سخت کاروائی کی جائے،اویس رشید ولد محمد رشید سکندر ٹاؤن عقب بلال ٹاؤن کی درخواست پر کاروائی کرتے ہوئے تھانہ سول لائن نے ملزمہ نیلم حسین کے خلاف بجرم 324/325ت پ کے تحت مقدمہ درج کر لیا گیاہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button