پنڈدادنخاناہم خبریں

پنڈدادنخان کے پانی کے مسائل کو حل کرنے کے لئے موجودہ حکومت عملی اقدامات کر رہی ہے۔ سیف انور جپہ

پنڈ دادنخان کے پانی کے مسائل کو حل کرنے کے لئے موجودہ حکومت عملی اقدامات کر رہی ہے ، اس ضمن میں 312 ملین ڈالر کی خطیر رقم سے 173 کلومیٹر طویل پانی کی نہر نکالی جا رہی ہے جس سے پنڈ دادنخان اور ملحقہ علاقے سیراب ہو سکیں گے ، پروجیکٹ کا دورانیہ چار سال پر مشتمل ہے ، نہر ہیڈ رسول سے شروع ہوکر خوشاب تک نکالی جائے گی جسکا 115 کلومیٹر ایریا ضلع جہلم سے گزرے گا۔

ان خیالات کا اظہار ڈپٹی کمشنر جہلم محمد سیف انور جپہ نے ہیڈ رسول، تھل، ڈنگوال، ادووال، چک نظام سمیت دیگر موضاجات کا دورہ کرتے ہوئے کیا، ڈپٹی کمشنر جہلم محمد سیف انور جپہ کا کہنا تھا کہ پنڈ دادنخان کے درینہ پانی کے مسائل کے حل کے لئے اس پروجیکٹ کو مکمل کیا جائے گا، پروجیکٹ کی تکمیل سے 3 لاکھ سے سے زائد آبادی کو صاف پانی میسر ہو سکے گا۔

انہوں نے بتایا ہے کہ نہر 170 موضاجات کو سیراب کرے گی جس میں سے 112 ضلع جہلم کی حدود میں شامل ہیں اور ان میں سے زیادہ تر تحصیل پنڈ دادنخان میں شامل ہیں، ڈپٹی کمشنر نے بتایا ہے کہ مختلف مقامات پر پرائس اسسمنٹ کی جا رہی ہے اور رقبہ کو مختلف قسموں پر تقسیم کرتے ہوئے پروجیکٹ کو مکمل کیا جائے گا۔

دورہ کے موقع پر اسسٹنٹ کمشنر پنڈ دادنخان گوہر وزیر، ڈی او انفارمیشن عثمان سندھو، تحصیلدار پنڈ دادنخان، محکمہ انہار کے افسران سمیت دیگر موجود تھے ۔ ڈپٹی کمشنر کا کہنا تھا کہ صاف ستھرا معیاری پانی فراہم کرنے کے لئے ایسے میگا پروجیکٹس سے اہل علاقہ مستفید ہوں گے اس پروجیکٹ کی سخت مانیٹرنگ کی جا رہی ہے انہوں نے بتایا ہے کہ رسول براج تا خوشاب 173 کلومیٹر طویل نہر سے ان علاقوں میں صاف پانی میسر ہو سکے گا۔

ڈپٹی کمشنر نے مزید بتایا ہے کہ 1350 کیوسک پانی سے 170 گاؤں سیراب ہوں گے ، اس میں سے 10 چھوٹی نہریں بھی نکالی جائیں گی اور سینکڑوں ٹیوب ویل صاف پانی کی فراہمی کو یقینی بنانے میں کار ساز ثابت ہونگے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button