جہلم

عیدالفطر کے اختتام کے ساتھ ہی جہلم شہر و گردونواح میں گندگی کے ڈھیر لگ گئے

جہلم: عیدالفطر کے اختتام کے ساتھ ہی جہلم شہر و گردونواح میں گندگی کے ڈھیر لگ گئے ۔ گرمی اور حبس کے باعث کوڑا کرکٹ کے ڈھیروں سے تعفن پھیلنے لگا، گندگی سے مختلف اقسام کی بیماریاں پھوٹنے کا اندیشہ ، شہریوں کا ارباب اختیار سے نوٹس لینے کا مطالبہ ۔

تفصیلات کے مطابق عید الفطر کے اختتام کے ساتھ ہی جہلم شہر و گردونواح کے علاقوں میں گندگی کے انبار لگ گئے ہیں جس سے تعفن اور شدید بدبو اٹھنا شروع ہو چکی ہے، گندگی کے باعث مچھر ، مکھیوں کی بہتات ہونے سے مختلف قسم کی بیماریاں پھوٹنے کا خدشبہ بھی لاحق ہو چکا ہے ۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ شہر میں صفائی کرنیوالے خاکروب اور سینٹری ورکرز نایاب ہو چکے ہیں ، جس کیوجہ سے شہر بھر کے گلی محلوں میں جا بجا گندگی کے ڈھیر نظر آتے ہیں ، عملہ صفائی مکمل طور پر غائب ہو چکا ہے ، اگرکوئی سینٹری ورکر نظرآتا ہے تو وہ ہلکی پھلکی صفائی کر کے شہریوں کی آنکھوں میں دھول جھونکتے ہی غائب ہونے کو ترجیح دیتا ہے۔

سینٹری ورکر کوڑا کرکٹ جمع کرکے گلی محلوں اور بازاروں میں ڈھیر لگا کر آگ لگا دیتے ہیں، جس کیوجہ سے خطرناک جراثیم پھیل کر شہریوں میں بیماریوں کا سبب بن رہے ہیں ۔ سینٹری ورکرز گلی محلوں کی صفائی ستھرائی کرنے کی بجائے پلازوں ، مارکیٹوں ، اور نجی دفتروں میں کام کرنے کو ترجیح دیتے ہیں، جبکہ تنخواہیں میونسپل کمیٹی سے وصول کی جاتیں ہیں ۔

شہریوںنے چیف سیکرٹری پنجاب، نگران وزیر اعلیٰ پنجاب ، کمشنر راولپنڈی، ڈپٹی کمشنر جہلم سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button