ہمیں شجر کاری کے ذریعے ضلع جہلم کے ماحول کو شفاف بنانا چاہیے۔ ڈویژنل فارسٹ آفیسر ساجد قدوس

0

دینہ: گورنمنٹ ڈگری کالج فار وومن دینہ میں فارسٹ ڈیپارٹمنٹ جہلم کے زیر اہتمام کالج کی طالبات میں شجرکاری کے حوالے سے آگاہی فراہم کرنے اور ماحولیاتی آلودگی سے بچاؤ کے لئے 100سے زائد آم اور سکھ چین کے پودے لگادئیے گئے ۔

ڈویژنل فارسٹ آفیسر ساجد قدوس اعوان، ایس ڈی ایف او جہلم سدھیر مغل، ایس ڈی ایف او سوہاوہ افتخار علی، ڈپٹی ڈائریکٹر کالجز عزیز الرحمان، پرنسپل گورنمنٹ ڈگری کالج فار وومن دینہ تعظیم زوبی اعوان کے ہمراہ سینکڑوں کی تعداد میں طالبات اور اساتذہ کرام نے شرکت کی۔

ڈویژنل فارسٹ آفیسر ساجد قدوس نے طلبہ و اساتذہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پوری دنیا شجر کاری کے ذریعے اپنے ماحول کو محفوظ بنارہی ہے تو ہمیں بھی شجر کاری کے ذریعے ضلع جہلم کے ماحول کو شفاف بنانا چاہیے یہ پودے زندگی کے ضامن ہیں اور یہی پودے اکسیجن فراہم کرتے ہیں،جو انسان کی زندگی کے لئے انتہائی اہم ہے۔شہر شہر گاوں گاوں پودے لگا کر موجودہ حکومت کا مشن گرین پاکستان کو پایہ تکمیل تک پہنچانا ہے ، اس کے لیے تمام طلبہ ایک ایک درخت لگائے اور ان کو اپنی نشانی کے طور پر کالج میں چھوڑ کر جائیں۔آنے والے وقتوں میں یہ درخت نہ صرف انسانوں کے لیے مفید رہیں گے بلکہ ایک خوبصورت مسکن کا کام دیں گے ۔

اس موقع پر ایس ڈی ایف او سدھیر مغل، ایس ڈی ایف او افتخار علی نے کہا کہ سکولوں، کالجوں اور دیگر تعلیمی اداروں میں شجرکاری مہم کو جاری رکھنا ہماری ترجیح اول میں شامل ہے اور ماحولیاتی آلودگی سے بچاؤ کے لئے عظیم شہریوں کو مل کر کام کرنا ہوگا۔

ڈپٹی ڈائریکٹر کالجز عزیز الرحمان، پرنسپل گورنمنٹ ڈگری کالج فار وومن دینہ تعظیم زوبی نے اس موقع پر بچوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نیچرل فارسٹ کی حفاظت ہم سب پر فرض ہے ۔ اپنے ذاتی درختوں کے ساتھ قدرتی درختوں اور جنگلوں کی بھی حفاظت ضروری ہے ۔ انکا کہنا تھا کہ آپ ﷺ نے درخت لگانے اور ان کی حفاظت کرنے والوں کے لیے بشارتیں سنائی ہے ، درخت لگانا اہم نہیں بلکہ ان کی حفاظت کرکے انہیں پھلتے پھولتے دیکھنا زیادہ اہم ہے ۔

کالج کی طالبات نے شجرکاری کے حوالے تقریر میں کہا کہ جنگلات سے حاصل ہونے والی لکڑی عمارتی کاموں کے علاوہ فرنیچر،کھیلوں کا سامان اور دیگر اہم ضروریات میں استعمال ہوتی ہے ، درخت بقائے زندگی اور بقائے ماحول کی ضمانت ہے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.