جہلماہم خبریں

پولیس کا شراب فروشوں کیخلاف حقائق مسخ کر کے جعلی مقدمہ، ولایتی شراب دیسی میں تبدل، ایک ملزم چھوڑ دیا

جہلم: تھانہ صدر جہلم پولیس کا شراب فروشوں کیخلاف حقائق مسخ کر کے جعلی مقدمہ،ولایتی شراب دیسی میں تبدل،ایک ملزم چھوڑ دیا،دوران گشت کانسٹیبل محمد اقبال نے لاہور موڑ روہتاس روڈ جہلم سے ملحقہ گلی میں موٹر سائیکل سوار تھانہ صدر کے خاکروب جمال اور یوسف جان کو ولایتی شراب کی پیٹی سمیت گرفتار کیا،اطلاع پرایس آئی قمر سلطان نے اپنی ذاتی کار پر ملزمان اور شراب کو تھانہ منتقل کیا۔
تفصیلات کے مطابق تھانہ صدر جہلم کی حدود میں چونگی نمبر 5 روہتاس روڈ جہلم سے ملحقہ گلی میں دو ملزمان یوسف جان اورخاکروب تھانہ صدر سے دوران گشت کانسٹیبل محمد اقبال 468/cنے ایک پیٹی شراب ولایتی سمیت رنگے ہاتھوں گرفتار کر لیااور تھانہ اطلاع پر قمر سلطان ایس آئی وغیرہ نے موقع پر پہنچ کر دو ملزموں اور شراب کو تھانہ منتقل کیا۔
حقائق کو مسخ کرتے ہوتے خاکروب تھانہ صدر جمال کو مقدمہ سے بچاتے ہوئے۔صرف یوسف جان پر دیسی شراب 30 لیٹر بمعہ گیلن جھوٹا مقدمہ درج کر لیا اور اپنے فرائض سے غفلت برتی۔
یاد رہے کہ دو سال قبل زہریلی شراب پینے سے اسی علاقہ میں پچیس سے زائد افراد ہلاک ہوئے اور یوسف جان ہی نامزد ملزم تھا۔کانسٹیبل محمد اقبال عرصہ اٹھارہ سال سے مسلسل تھانہ صدر تعینات ہے، جو ناقابل فہم ہے۔
جب ایس ایچ او تھانہ صدر جہلم ملک محمود سے موقف جاننے کیلئے کال کی تو انہوں نے کہا کہ کل سے گھر وہ چھٹی پر ہیں اور تھانہ جا رہے ہیں تھانہ پہنچ کے تحقیق کرتا ہوں۔
اس تمام تر صورتحال کے پیشِ نظر جہلم کے سماجی حلقوں نے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر جہلم سید حماد عابد سے مطالبہ کیا ہے کہ فرائض کی ادائیگی میں غفلت اور ملزمان سے گٹھ جوڑ کرنے والے پولیس اہلکاروں کیخلاف قانونی کارروائی کی جائے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button