جہلم

بھارتی فوج نے 60 سالہ کشمیری کو شہید کر کے درندگی کی ایک اور داستان رقم کی ہے۔ میاں لیاقت علی

جہلم: برطانیہ میں مقیم پاکستانی نژاد برطانوشہری ی میاں لیاقت علی نے ٹیلیفونک گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر میں 3 سالہ معصوم بچے کے سامنے اس کے 60سالہ نانا کو شہید کر کے درندگی کی ایک اور داستان رقم کی ہے ،خون میں لت پت میت کے سینے پر بیٹھے ہوئے ننھے فرشتے کی تصویر نے دنیا کے دل اور جگر چھلنی کرکے رکھ دیے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارت کی ریاستی دہشت گردی مقبوضہ کشمیر کے نوجوانوں کی شہادتیں اب روز مرہ کا معمول بن چکا ہے، پچھلے کئی مہینوں سے کشمیر یوں کو کرفیولگا کر گھروں میں محصور کررکھا ہے جبکہ کورونا وباء بھی ہے مگراس کے باوجود وادی کشمیر میں لاک ڈاؤن ہے اور بھارتی فورسز کی کاروائیاں بھی جاری ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بے گناہ کشمیریوں کا قتل عام ہورہا ہے ، مقبوضہ کشمیر کے علاقے سوپور میں پیش آنے والے یہ اندوہ ناک واقعہ اس بات کی گواہی ہے کہ بھارت کی مسلح افواج غیر انسانی حد تک درندہ صفت ہوچکی ہے اب ان سے راہ چلتے لوگ بھی محفوظ نہیں رہے۔جیسا کہ اس عمررسیدہ شخص کو گولیوں کا نشانہ بنایا گیا ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close