جہلم

جادہ اولڈ جی ٹی روڈ تا شاندار چوک اور منڈی موڑ تا کچہری سڑک کی نئی تعمیر، ٹھیکیدار کھدائی کرکے غائب

جہلم: جادہ اولڈ جی ٹی روڈ تا شاندار چوک ، منڈی موڑ تا ضلع کچہری کی سڑک کی نئی تعمیر کو ٹھیکیدار کھدائی کرکے غائب، ہزاروں شہریوں کو مشکلات کا سامنا۔ سینکڑوں دکاندار سڑک کی کھدائی کیوجہ سے بے روزگار ہیں۔

تفصیلات کے مطابق جہلم جادہ تا شاندار چوک ، منڈی موڑ تا ضلع کچہری کی سڑکیں پچھلے کئی سالوں سے گڑھوں میں تبدیل ہو چکی ہیں، جس کا تقریبا 4 ماہ قبل پاکستان تحریک انصاف کے صوبائی رہنما ممبر پنجاب اسمبلی چوہدری ظفر اقبال نے ان سڑکوں کی نئی تعمیر کا افتتاح کیا جس کا ٹھیکہ محکمہ ہائی وے نے ٹھیکیدار کو دیا جس پر ٹھیکیدار نے سڑک کی کھدائی کے بعد نئی بجری ڈالنے کی بجائے پرانی بجری کو از سرنو سڑک پر پھیلا دیا اور پچھلے 2 اڑھائی ماہ سے کام بند کر رکھا ہے۔

محکمہ ہائی وے کے افسران بھی اس حوالے سے مکمل خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں جبکہ اندورن شہر کی سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہونے کیوجہ سے سڑک کے دونوں اطراف موجود دکانداروں کو روزانہ کی بنیاد پر لاکھوں روپے کا نقصان برداشت کرنا پڑرہا ہے ، ٹھیکیدار نے سول ہسپتال کے باہر برائے نام مشینری کھڑی کرکے اپنی حاضری کو یقینی بنایا ہوا ہے جبکہ عملی طور پر سڑک پر کہیں کام ہوتا دکھائی نہیں دیتا۔

افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ممبر پنجاب اسمبلی چوہدری ظفر اقبال نے اولڈ جی ٹی روڈ کو 6 ماہ میں مکمل کرنے کا اعلان کیا تھا مگر اب 4 ماہ سے زائد کا عرصہ گزرجانے کے باوجود سڑک کی تعمیر تاخیر کا شکار ہے۔

انتہائی باوثوق ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ٹھیکے کی رقم جاری ہو چکی ہے لیکن محکمہ ہائی وے کے افسران کی عدم دلچسپی کیوجہ سے دونوں سڑکوں کا کام ادھورا پڑا ہے ۔

شہریوں نے ممبر پنجاب اسمبلی چوہدری ظفر اقبال سے مطالبہ کیا ہے کہ اولڈ جی ٹی روڈ میں پرانی بجری استعمال کرنے والے ٹھیکیدار کو نئی بجری استعمال کرنے کا پابند بنایا جائے اور مقررہ معیاد کے اندر اندر دونوں سڑکوں کی تعمیر مکمل کروانے کے احکامات جاری کئے جائیں تاکہ شہریوں کی مشکلات میں کمی واقع ہو سکے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button