محکمہ مال دینہ کے افسران کی غفلت ، شہریوں کی جائیدادیں غیر محفوظ، فرد مالکیت لینا سائلین کیلئے خواب بن گیا

0

دینہ: تحصیل دینہ میں محکمہ مال کے افسران کی غفلت ، شہریوں کی جائیدادیں غیر محفوظ، فرد مالکیت لینا سائلین کے لئے خواب،شہریوں کا ڈپٹی کمشنر سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق تحصیل دینہ میں محکمہ مال کے ریونیوکے افسران کی پشت پناہی کے باعث شہر و گردونواح میں فرد ملکیت لینا ایک خواب بن چکا ہے ، بعض علاقوں میں پرانی تاریخوں میں فرد ملکیت جاری کئے جاتے ہیں جن کے نرخ ہزاروں روپے مقررکررکھے ہیں جبکہ فرد ملکیت کا سرکاری نرخ 50 روپے سے بھی کم ہے ،شہریوں کی جائیدادیں غیر محفوظ ہوگئیں۔

فرد ملکیت جاری نہ ہونے سے دینہ شہر و گردونواح میں روزانہ ہزاروں لاکھوں روپے کے ریونیو کا نقصان متعدد علاقوں کے پٹوار سرکل لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ نہیں ہو سکے ۔ جبکہ سپریم کورٹ نے فرد ملکیت لینے کے لئے لینڈ ریکارڈ دفتر رجوع کرنے کے احکامات جاری کررکھے ہیں ، متعدد موضعات میںپرانی تاریخوں میں فرد جاری کرنے کے لئے پٹوار خانوں میں کالا دھندہ عروج پرہے۔

شہریوں کا اس حوالے سے کہناہے کہ محکمہ مال دینہ تحصیل بھر میں ان سرکلوں میں فرد ملکیت بند ہونے سے پٹواریوں نے لوٹ مارکا بازار گرم کررکھاہے ، 50 روپے کی سرکاری فیس والے فرد کو ہزاروں روپے میں نیلام کیا جارہا ہے جبکہ درجنوں موضعات میں پرانی تاریخوں میں فردیں جاری کی جارہی ہیں ، روزنامچے کااندراج بھی تواتر سے کیا جارہاہے۔

محکمہ مال کے ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ تحصیل دینہ کے کئی علاقوں میں ملی بھگت سے یہ دھندہ چل رہاہے اس میں متعلقہ بااثر افراد فی فرد حصہ وصول کر رہے ہیں ، جو کرپشن کی ریس میں سب سے آگے ہیں۔

تحصیل دینہ کے شہریوں نے کمشنر راولپنڈی ، ڈپٹی کمشنر جہلم سے مطالبہ کیا ہے کہ تحصیل دینہ میں قائم جنگل کے قانون کے خاتمے کے لئے فرض شناس ایماندار افسران و اہلکاروں کو تعینات کیا جائے تاکہ کرپشن کا عنصر ختم ہو سکے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.