مخالفین سوچی سمجھی سازش کے تحت ہماری شہرت کو نقصان پہنچا رہے ہیں، چوہدری رفاقت، چوہدری محفوظ اختر

0

جہلم: نواحی علاقہ پھلائیاں کے رہائشی چوہدری رفاقت ، چوہدری محفوظ اخترنے مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے مخالفین سوچی سمجھی سازش کے تحت ہماری مالکیتی اراضی کو ہتھیانے کی غرض سے ہماری شہرت کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔

متاثرین نے کہا کہ شبیر حسین ولد منیر حسین ، ایاز اکرم ولد محمد اکرم اور چوہدری سکندر حیات ہمارے خلاف بے بنیاد ، من گھڑت جھوٹی درخواستیں دیکر ہمیں پریشان کر رہے ہیں ، وزیر اعظم پاکستان ، چیف جسٹس آف پاکستان ، وزیر اعلیٰ پنجاب ، ڈی پی او جہلم انصاف فراہم کریں۔

چوہدری رفاقت ، چوہدری محفوظ اختر عرف چاند نے مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ سال 2003 ء سے 2006 ء کے عرصہ میں ہمارے بزرگوں چوہدری محمد اشرف چوہدری محمد اختر ، چوہدری محمد افضل، چوہدری محمد انورنے زرعی اراضی موضع گوڑھا احمدمیں خرید کی جس میں شاملات دیہہ کا رقبہ بھی شامل ہے۔

چوہدری رفاقت نے کہا کہ میں پچھلے 31 سال سے بمعہ اہل و عیال فرانس میں مقیم ہوں، میری عدم موجودگی میں میرا چچا زاد بھائی چوہدری محفوظ اختر عرف چاند اراضی کی دیکھ بھال کرتا رہا اس دوران ہم نے کثیر رقم خرچ کرکے اپنی جگہ میں 2 ڈیرہ جات قائم کئے جبکہ غیر آباد بنجر زمین کو آباد کرنے کی غرض سے ٹیوب ویل لگائے تاکہ اراضی کو قابل کاشت بنایا جا سکے۔ اس دوران میرے والد اکثر اوقات مالکیتی زمین کا چکر لگایا کرتے سال 2010 ء میں میرے والد وفات پاگئے، جبکہ اراضی کے تمام معاملات چوہدری محفوظ اختر عرف چاند نے دیکھنے شروع کئے اس طرح انہوں نے بنجر زمین کو قابل کاشت بنانے کے لئے ڈیرہ جات پر مزارعے رکھے جنہوں نے ہماری اراضی کی دیکھ بھال شروع کر دی ۔

انہوں نے کہا کہ چوہدری محفوظ اختر عرف چاند سال 2011 ء میں فرانس منتقل ہوگئے اس طرح ہم سب کی رضا مندی سے چوہدری سکندر حیات کو ارضی کی دیکھ بھال کی ذمہ داری سونپ دی گئی ، جبکہ اس جگہ میں چوہدری سکندر کی 1 مرلہ بھی جگہ نہیں ہے ، ہماری عدم موجودگی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے چوہدری سکندر حیات نے چوہدری صفدر حیات عرف بابر، چوہدری عصر حیات کے ساتھ ملکر ہماری مالکیتی اراضی شبیر حسین ولد منیر حسین ، ایاز اکرم ولد محمد اکرم سکنہ گوڑھا احمد سے لاکھوں روپے وصول کرکے قبضہ کروانے کی کوشش کی جس پر ہمارے بزرگ چچا چوہدری محمد اختر، چوہدری محمد افضل، چچا زاد بھائی چوہدری عقیل انورنے مشاورت کے بعد معزز عدالت سے حکم امتناعی برخلاف مسمیان بشیر حسین ایاز اکرم ،سکندر حیات حاصل کیا اور دعویٰ دائر کر دیاہے۔

چوہدری محفوظ اختر عرف چاندنے کہا کہ مخالفین سوچی سمجھی سازش کے تحت طرح طرح کے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کررہے ہیں ، سوشل میڈیا پر ہماری کردار کشی کی جاری ہے تھانوں میں من گھڑت ، جھوٹی درخواستیں دی جارہی ہیں ،جبکہ اصل حقائق سب کے سامنے ہیں ہمارے پاس مالکیتی اراضی کے تمام ثبوت موجود ہیں اور آج بھی ہم اپنی اراضی پر قابض ہیں۔

انہوںنے وزیر اعظم پاکستان عمران خان ، چیف جسٹس آف پاکستان ، وزیر اعلیٰ پنجاب، کمشنر راولپنڈی، ڈی پی اوجہلم ، ڈپٹی کمشنر جہلم سے مطالبہ کیاہے کہ ہمیں انصاف فراہم کیاجائے تاکہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کا وطن عزیز پر اعتماد بحال رہ سکے اور دیار غیر میں مقیم پاکستانی پاکستان کے اندر صنعتیں قائم کرکے بے روزگاری کا خاتمہ کر سکیں ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.