جہلم

ملٹری کالج جہلم ملکی دفاع اور استحکام کے لئے اہم کردار ادا کررہا ہے۔ لیفٹیننٹ جنرل ہدایت الرحمن

جہلم (نعیم اختربھٹی) ملٹری کالج جہلم کا قیام برصغیر پاک وہند میں تاج برطانیہ کے دور میں مارچ 1922 عمل میں آیا اس وقت کے پرنس آف ویلز نے بذات خوداس کا افتتاح کیا اور 15ستمبر 1925کو بلڈنگ اور ہاسٹل کے قیام کے بعد کلاسزز کا باقاعدہ اجراء کیا ۔

15ستمبر کو ہر سال ہر سال ملٹری کالج میں یوم تاسیس منایا جاتا ہے اور آج اسی تسلسل کی گھڑی تھی کہ ملٹری کالج سے فارغ التحصیل فوجی و سول افسران نے شرکت کی جنھیں ملٹری کالج سرائے عالمگیر سے فارغ التحصیل طلبہ کو عالمگیرین بھی کہا جاتا ہے۔

اسی حوالے سے ملٹری کالج جہلم میں 94واں یوم تاسیس منایا گیا ، جس میں میجر جنرل محمد اصغر،میجر جنرل عابد رفیق اور میجر جنرل (ریٹائرڈ) محبوب المظفر اور کالج سے فارغ التحصیل ہونے والے سمیت عالمگیرین کی بہت بڑی تعداد شامل ہوئی۔

تقریب کے مہمان خصوصی لیفٹیننٹ جنرل ہدایت الرحمن نے پاک فوج میں شامل ہونے والے مادر وطن پر اپنی جان نچھاور کر نے والے سینکڑوںشہید عالمگیرین کی یاد گار پر پھول چڑھائے اور فاتحہ خوانی کی اور فتنس سنٹر کا بھی افتتاح کیا۔

مہمان خصوصی نے اپنے خطاب میں ملٹری کالج جہلم کی خدمات کو سراہتے ہوئے کہا کہ کالج ملکی دفاع اور استحکام کے لئے اہم کردار ادا کررہا ہے اور عالمگیرین نہ صرف فوج بلکہ سول اداروں میں بھی اہم خدمات سر انجام دے رہے ہیں۔

کالج کے کمانڈنٹ بریگیڈیئراحمد سلیمان نے مہمانوں کو خوش آمدید کہتے ہوئے کالج کی تاریخ اور کارکردگی پر روشنی ڈالی یوم تاسیس کے موقع پر عالم گیرین ایسوسی ایشن کا 13واں سالانہ اجلاس بھی منعقد ہوا جس میں سینئر ترین کالج نمبر اور جونئیر ترین کالج نمبر والوں کو اعزازی شیلڈ دی گئی۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button