کھیوڑہ میں 7 کروڑ روپے کی گرانٹ سے بننے والے منی اسٹیڈیم کا کام ادھورا چھوڑ کر ٹھیکیدار غائب

0

کھیوڑہ: پنجاب حکومت کی طرف سے سات کروڑ روپے کی گرانٹ سے بننے والے منی سٹیڈیم کا کام ادھورا چھوڑ کر ٹھکیدار غائب ہو گیا، منتخب نمائندوں کی عدم دلچسپی کی وجہ سے منی سٹیڈیم کی تعمیرات کا کام تقریبا ایک ماہ سے بند پڑا ہے، عوامی سماجی حلقوں کا چیف سیکرٹری پنجاب کمشنرراولپنڈی ڈائریکٹر اینٹی کرپشن پنجاب سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق کھیوڑہ کے عوامی سماجی حلقوں میں سماجی شخصیت ملک رمضان ملک علی اصغر کونسلر ملک سعادت محمود اعوان سماجی شخصیت رضوان انور ایڈووکیٹ فرید ملک تحصیل رہنما عوامی مسلم لیگ ملک عظیم سرور راجہ سہیل سیاسی و سماجی شخصیت کھیوڑہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت کی طرف سے کھیوڑہ شہر میں منی سٹیڈیم کی منظوری دی اورسات کروڑ روپے کی گرانٹ جاری ہوئی گرانٹ جولائی 2017 میں جاری کی گئی اور سیاسی نمائندوں کی طرف سے اعلان کیا گیا کہ دسمبر 2017 تک منی سٹیڈیم کی تعمیر مکمل ہو جائے گی مگر دسمبر 2017ختم ہوئے بھی تین ماہ مکمل ہونے والے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ ٹھیکیدار نے آٹھ ماہ کے دوران صرف چار کالموں کی کھدائی کر کے صرف آر سی سی فونڈیشن ہی بنا سکا تقریبا ایک ماہ گزر چکا ہے کہ ٹھیکیدار تعمیراتی کام ادھورا چھوڑ کر غائب ہو گیا جب کہ سائیڈ پر مکسچر مشین اور میٹریل پڑا ہے۔

عوامی سماجی حلقوں نے چیف سیکرٹری پنجاب کمشنرراولپنڈی ڈائریکٹر اینٹی کرپشن پنجاب سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے اور کہا کہ ٹھیکیدار کے خلاف کام میں عدم دلچسپی لینے پر محکمانہ کاروائی کی جائے اور منی سٹیڈیم کی تعمیر کا کام جلد سے جلد شروع کروا کر پراجیکٹ مکمل کروایا جائے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.