جہلم

حکومتی ناقص پالیسیوں کے باعث مہنگائی کا طوفان شہریوں کو نگلنے لگا

جہلم: حکومتی ناقص پالیسیوں کے باعث مہنگائی کا طوفان شہریوں کو نگلنے لگا ،آٹا، چینی ، گھی ، دالیں ، مصالحہ جات اور دیگر کھانے پینے کی اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ ، مہنگائی نے شہریوں کو زندہ درگور کر دیا۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ حکومت کی ناقص پالیسیوں اور معیشت کی بہتری پر توجہ نہ دینے کی وجہ سے شہری مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں وزراء کی زیادہ توجہ اپنے محکموں کی بجائے اپوزیشن کو تنقید کا نشانہ بنانے پر مرکوز ہے جس کیوجہ سے ضلع بھر میں مہنگائی کے باعث غریب شہریوں کے لئے 2وقت کی روٹی کا حصول بھی ناممکن ہو چکا ہے۔ اڑھائی سال کا عرصہ گزرجانے کے باوجود حکومت اپنی سمت کا تعین ہی نہیں کر سکی ، جس کی وجہ سے شہریوں کے لئے ہر گزرتے دن کیساتھ پریشانیوں میں اضافہ ہو رہاہے

شہریوں کا کہناہے کہ سابقہ حکمران کرپٹ بدعنوان ،لوٹ مار میں ملوث تھے مگر انہوں نے عوام کو ریلیف دیئے رکھا ، موجودہ حکمران ریلیف کی بجائے عوام کوتقریباًاڑھائی سال میں ذہنی تناؤ میں مبتلاکرنے کے سوا کچھ نہیں کر سکے۔

وزیر خزانہ اسد عمر جو 42روپے لیٹر پٹرول کا ڈھنڈورہ پیٹتے رہے اب ان کے دور اقتدار میں پٹرول111 روپے فی لیٹر فروخت ہو رہا ہے ، حکمران ایک منشور کے تحت شہریوں سے جمع پونجی لوٹ رہے ہیں جس کی وجہ سے ووٹرز نے جو امیدیں پی ٹی آئی کی حکومت سے لگارکھی تھیں دم توڑنا شروع ہو چکی ہیں۔

شہریوں نے وزیر اعظم پاکستان عمران خان سے مطالبہ کیا ہے کہ اشیاء خوردونوش سمیت پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی جائے تاکہ شہری اپنے بچوں کو 2 وقت کی روٹی مہیا کر سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button