جہلم

جہلم میں مختلف ہوٹلز پرناقص و غیر معیاری کھانوں کی فروخت، شہری بیماریوں میں مبتلا

جہلم: شہر و گردونواح میں مختلف ہوٹلز پر غیر معیاری کھانوں کے ساتھ ساتھ صفائی کے ناقص انتظامات کے باعث شہری مضر صحت کھانے ، کھانے پر مجبور ۔

ڈسٹرکٹ فوڈ اتھارٹی کی طرف سے چند ہفتے قبل شہر اور گردونواح میں واقع ہوٹلز اور کھانے پینے کی دکانوں اور غیر معیاری مضر صحت اشیاء فروخت کرنے والوں کے خلاف چیکنگ کا آغاز کیا گیا اور اس مہم کے دوران ناقص صفائی اور غیر معیاری مضر صحت کھانے اور دیگر اشیاء خوردونوش فروخت کرنے والے ہوٹلز و دکانیں سیل کی گئیں اور مالکان کو جرمانے کئے گئے صفائی کے انتظامات بہتر بنانے اور معیاری کھانے اشیاء تیار کر کے فروخت کرنے کے احکامات جاری کئے گئے ۔ بعض ناقص و غیر معیاری کھانے تیار کرنے اور فروخت کرنے والے ہوٹلز ماکان کے ہوٹلز سیل کئے گئے جنہیں جرمانے وصول کرنے کے بعد دوبارہ کام جاری رکھنے کی اجازت دے دی گئی ۔

اس مہم کے نتیجہ میں دکانیں ، بیکریوں اور ہوٹلز پر ْصفائی کی صورت حال میں چند روز کے لئے بہتری آئی اور شہریوں کو معیاری اشیاء ملناشروع ہو گئیں۔ نیز دودھ اور دہی، گوشت میں ملاوٹ میں نمایاں کمی دیکھنے میں آئی ،مگر ڈسٹرکٹ فوڈ اتھارٹی کی جانب سے جونہی چیکنگ کا سلسلہ تھما تو نہ صرف ملاوٹ مافیاپہلے کی نسبت تیزی سے سرگرم ہو گیا بلکہ ایک بار پھر سے غیر معیاری مضر صحت کھانے ، دکانوں ہوٹلوں پر صفائی کے ناقص انتظامات ، ملاوٹ شدہ دودھ ، دہی ، اور دیگر اشیاء کی فروخت کا سلسلہ دوبارہ سے شروع ہو چکا ہے۔ شہری مضر صحت کھانا کھانے پر مجبور ہیں۔

شہریوں نے پنجاب فوڈ اتھارٹی کے ذمہ داران سے مطالبہ کیا ہے کہ کھانے پینے کی دکانوں ، بیکریوں اور ہوٹلوں پر صفائی کے انتظامات ، کھانوں اوردیگر اشیا ء خوردونوش کے معیار کی چیکنگ کے لئے ڈسٹرکٹ فوڈ اتھارٹی کے ذمہ داران کو روزانہ کی بنیاد پر چیکنگ کرنے کا پابند بنایا جائے تاکہ ضلع بھر کے شہری حفظان صحت کے اصولوں کے عین مطابق اشیاء خوردونوش خرید اور استعمال کر سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button