دینہ

ٹی ایم اے دینہ واٹر سپلائی کی شکل میں عوام کو موت بانٹنے لگی، شہری بیماریوں میں مبتلا

دینہ: ٹی ایم اے دینہ واٹر سپلائی کی شکل میں عوام کو موت بانٹنے لگی ،جگہ جگہ پر نالوں میں پائپ لیکیج کی شکایت ،نالوں کا پانی واٹر سپلائی کے پائپوں میں شامل ہو رہا ہے ،جس کی وجہ سے ہیپاٹائٹس اور پیٹ کی بیماریاں پھیلنے کے خدشات بڑھ گئے ہیں ،ٹی ایم اے دینہ کی واٹر سپلائی لائن کو بچھائے تقریبا 25سال سے زیادہ عرصہ گزر گیا ہے ،واٹر سپلائی کے پانی کا لیبارٹری معائنہ کروایا جائے۔

تفصیلات کے مطابق دینہ شہر میں واٹر سپلائی سسٹم کو قائم کیے عرصہ 25سال سے زیادہ ہو گیا ہے جس کی وجہ سے پائپ لائن زنگ آلود ہو چکی ہے اور اس کے ساتھ ساتھ یہ کئی جگہ سے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے ایک بات جو دیکھنے میں آئی ہے کہ واٹر سپلائی پائپ لائن کئی جگہوں سے گندے نالوں کے ساتھ ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے جیسا کہ تاجپوری مسجد کے نزدیک کشمیر بیکرز کے ساتھ ساتھ شہر کی مختلف گلیوں میں گندے نالے اور نالیوں کا پانی واٹر سپلائی کے پائپوں میں شامل ہو رہا ہے جو کہ ٹی ایم اے دینہ کی جانب سے عوام میں موت بانٹنے کے مترادف ہے۔

واٹر سپلائی کے پائپوں میں نالوں کا گندا پانی شامل ہونے کی وجہ سے ہیپاٹائیٹس اور پیٹ کی بیماریوں کے خدشات بڑھ گئے ہیں ،بلدیہ دینہ کا واٹر سپلائی پینے کے قابل نہیں ہے کیونکہ اس سے بدبو آتی ہے جس کی وجہ سے شہریوں کو پینے کے پانی کے حصول میں شدید مشکلات کا سامنا ہے ،پانی انسانی زندگی کی ایک بنیادی ضرورت ہے اور حکومت وقت کی ذمہ داری ہے کہ ان کو صاف پینے کا پانی میسر کرے۔

ضرورت اس امر کی ہے کہ واٹر سپلائی کے پانی کا لیبارٹری معائنہ کروایا جائے اور اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ یہ پانی انسانوں کے پینے کا قابل بھی ہے یا نہیں ہے،اور اس کے ساتھ ساتھ زنگ آلود پائپ لائن کو تبدیل کیا جائے کیونکہ ان پائپوںکی لیکیج کی وجہ سے نالیوں کا گندا پانی شامل ہو رہا ہے جو دینہ شہر کی عوام کی صحت کے لیے نقصان دہ ہے۔

عوام الناس نے ڈپٹی کمشنر جہلم محمد اقبال خان،اسسٹنٹ کمشنر دینہ ،چیئرمین بلدیہ دینہ میاں عاشق ،اور ٹی ایم اے دینہ سے مطالبہ کیا ہے کہ اس مسئلہ کا فوری نوٹس لیا جائے اور انسانی جانوں کو لاحق خطرے سے بچایا جائے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button