پاک فوج کی لازوال قربانیاں رہتی دنیا تک یاد رکھی جائیں گی، سید عرفان امیر شاہ بخاری

0

سوہاوہ: پاکستان بھارت1965کی جنگ اس دور میں ہوئی جب پاکستان کو معرضِ وجود میں آئے قلیل مدت ہوئی تھی،ہمارے وسائل محدود اور مسائل لا محدود تھے،لیکن پاک فوج کے شانہ بشانہ پاک قوم کے ہر فرد نے سرزمین پاک کے دفاع اور تحفظ کیلئے سر پر کفن باندھ لیا،مسلح افواج نے دشمن کو لتاڑ کر اقوام عالم پر ثابت کر دیا کہ حق و باطل کے معرکہ میں سدا۔ فتح بالیقین ہیں ہم لوگ۔

ان خیالات کا اظہار پیر سید عرفان امیر شاہ بخاری (سرپرستِ اعلیٰ تحریک لبیک پاکستان ضلع جہلم) نے اپنے ایک بیان میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ ایک طرف ہماری برّی اور بحری فوج نے دشمن کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کیا تو دوسری طرف ہماری پاک فضائیہ کے شاہینوں نے دشمن کودُم دُبا کر بھاگنے پر مجبور کر دیا۔

انہوں نے کہا کہ مسلح افواج کی یہ لازوال قربانیاں رہتی دنیا تک یاد رکھی جائیں گی۔6ستمبر کی شکست بھارت کبھی نہیں بھول سکتا۔ آج پوری قوم اپنی چٹان صفت اور اوصافِ حمیدہ کی مثالی پیکر مسلح افواج کو خراج تحسین پیش کر رہی ہے۔ ہماری بہادر فوج نہ صرف سرحدوں پر دشمن کا مقابلہ کر رہی ہے بلکہ گزشتہ کئی عشروں سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہراول دستے کا کردار ادا کرتے ہوئے دشمن کا صفایا بھی کیا۔

انہوں نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ قوم کا ہر فرد نظم و ضبط،یقین و محکم اور اتحاد و یگانگت کو اپنا نصب العین بناتے ہوئے سرزمین پاک کے دفاع ،تحفظ ،بقاء،سلامتی،وقار اور تقدس کو بحال و برقرار رکھنے کے عمل میں اپنا کلیدی کردار ادا کرے، یہی پاکستان سے پیار و محبت کا تقاضا ہے۔

پیر سید عرفان امیر شاہ بخاری نے کہا کہ قوم کے ہر فرد پر یہ بھی لازم ہے کہ وہ اپنی مسلح افواج کے شانہ بشانہ کھڑاہو،طاغوتی طاقتوں اور پاکستان کے سماج دشمن عناصر کی سازشوں کو ناکام بنانا پوری قوم کی ذمہ داری ہے۔ہمیں اپنی پاک سرزمین کو کرپشن،بد عنوانی اور دیگر سماجی اور معاشرتی برائیوں سے پاک کرنا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں دینِ اسلام اور وطن عزیز پاکستان کی سربلندی کیلئے خود کو ایک رول ماڈل کے طور پر پیش کرنا ہوگا تا کہ ہماری حرمت،برتری اور فضیلت کی مثالیں اقوامِ عالم میں دی جائیں۔ہم بفضلِ باری تعالیٰ ایٹمی قوت ہیں، ہم اپنے دشمنوں کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرنے کی پوری قوت اور طاقت رکھتے ہیں، اُن پر غلبہ پانے کی بھرپور جرأت،اہلیت کا صلاحیت کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہمیں اُن کی زبان میں انھیں جواب دینا ہو گا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.