جہلماہم خبریں

ڈی سی، ڈی پی او کے تجاوزات کے خلاف مشترکہ آپریشن سے قبل ہی قبضہ مافیا کی غنڈہ گردی شروع

جہلم: ڈی سی، ڈی پی او کے تجاوزات کے خلاف مشترکہ آپریشن سے قبل ہی قبضہ مافیا کی غنڈہ گردی شروع، اثریہ روڈ پر بدنام زمانہ مچھلی منڈی کے قبضہ مافیا کا چھریوں ، ٹوکوں سے میونسپل کارپوریشن عملہ پر حملہ، ملازمین نے بھاگ کر جان بچائی،دو افراد کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی درخواست دی گئی،اصل حملہ آوروں کی بجائے ملازمین کو آگے کر کے مقدمہ میں نامزد کروا دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ ہفتہ کے دوران ڈی سی جہلم راو پرویز اختراور ڈی پی او جہلم شاکر حسین کی جانب سے تجاوزات مافیا کے خلاف سخت ایکشن لینے اور 18جنوری سے باقاعدہ آپریشن شروع کرنے کیلئے بلند و بانگ دعوے کئے گئے اور تجاوزات مافیا کے ہر حربے سے سختی سے نمٹنے کا فیصلہ کیا گیا لیکن باقاعدہ آپریشن شروع ہونے سے قبل ہی میونسپل کارپوریشن کی انسداد تجاوزات ٹیم جب مختلف دوکانداروں کو وارننگ دینے کیلئے اثریہ روڈ پر واقع مچھلی منڈی پہنچی تو مچھلی فروشوں نے چھریوں ، ٹوکوں سے عملہ پر حملہ کر دیا جس پر میونسپل عملہ نے بھاگ کر بڑی مشکل سے جان بچائی جبکہ اس دوران کئی ملازمین کے کپڑے پھٹ گئے اور معمولی زخمی بھی آئے۔

یاد رہے کہ مذکورہ مچھلی منڈی کے مالکان بدنام زمانہ جھگڑالو ہیں اور کچھ عرصہ قبل ہی انہوں نے ضلع کونسل کے ایک ملازم اور اس کے بھائی پر حملہ کرکے چھریوں کے وار کرکے زخمی کر دیا تھا اور بعد ازاں اصل مجرموں کی بجائے ملازمین کو آگے کر دیا تھا۔

گزشتہ روز بھی میونسپل کارپوریشن عملہ پر حملہ کرنے کے بعد اصل ملزمان موقع سے غائب جبکہ دو افغانی ملازمین کو حملہ آور ظاہر کردیا گیا میونسپل کارپوریشن کی جانب سے دونوں ملازمین کے خلاف مقدمہ کی درخواست دے دی گئی ہے البتہ اصل قبضہ مافیا اس مرتبہ بھی بچ نکلنے میں کامیاب ہو گئے ہیں۔

شہریو ں کا کہنا ہے کہ شہر میں قبضہ مافیا اس قدر مضبوط ہو چکا ہے کہ وہ سرکاری ملازمین کو کچھ سمجھتا ہی نہیں ، ڈی سی جہلم ، ڈی پی او جہلم اگر ملازمین کو تحفظ نہیں دیں گے تو چھوٹے غریب ملازمین یونہی تشدد کا نشانہ بنتے رہیں گے اور کسی ملازم کی جان بھی جاسکتی ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button