کھیوڑہ شہر سمیت گردونواح میں ٹریکٹر ٹرالیاں، ڈمپرمالکان کی اوورلوڈنگ معمول بن گئی

0

کھیوڑہ شہر سمیت گردونواح میں ٹریکٹر ٹرالیاں، ڈمپرمالکان کی اوورلوڈنگ معمول بن گئی، پٹرولنگ پولیس، ٹریفک پولیس سمیت مقامی انتظامیہ اس جان لیوااوورلوڈنگ کو روکنے میں بری طرح ناکام نظر آتے ہیں، متعلقہ محکموں نے ذمہ داری ایک دوسرے پر ڈال کر جان چھڑا لی، ٹریفک پولیس کے اہلکار مخصوص مقامات پر عام گاڑیوں سے ریونیو اکٹھا کرتے نظر آتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کھیوڑہ اور ڈنڈوت میں جپسم ،لائم سٹون ،سمیت دیگر معدنیات کی ماینز اور لیزیں ہیں جہاں سے ڈمپروں ،ٹریکٹر ٹرالیوں کے ذریعے جپسم اور دوسری معدنیات مختلف مقامی فیکٹریوں میں پہنچائی جاتی ہیں یہاں کے ڈمپرمالکان نے ٹریفک پولیس کی ملی بھگت سے اوور لوڈنگ کو روزمرہ کامعمول بنا رکھا ہے۔

ڈرائیور حضرات کی دیدہ دلیر ی حیران کن ہیں جیسے انہیں کسی کا ڈر خوف ہی نہیں ہے یہ اوورلوڈ ڈمپر کھیوڑہ شہر سے جب گزرتے ہیں تو لوگ ان کی اوور لوڈنگ دیکھ کر حیران رہ جاتے ہیں عوامی تاثر ہ ہے کہ ٹریفک پولیس کی ملی بھگت کے بغیر یہ سب ممکن نہیں ہے کیونکہ ا وور لوڈ ڈگاڑیاں ان کے سامنے سے گزرتی ہیں مگر انہوں نے تو کبھی ان کو پوچھا تک نہیں۔

باوثوق ذرائع کے مطابق ٹریفک پولیس کے اہلکار منتھلی لے کر خاموش تماشائی بن جاتے ہیں جبکہ پیٹرولنگ پولیس کا موقف ہے کہ یہ ایریا ہمارے کنٹرول میں نہیں ہے جبکہ ٹریفک پولیس اہلکارو ں کا مرکز نظر عمومی طور پر موٹر سائیکل سوارو ں اور باہر سے سیاحت کے لیے آنے والی گاڑیوں کا چالان کرنے یا مک مکا کرنے کی صورت میں دیکھاجاتا ہے۔

ہیوی اوور لوڈ گاڑیاں جب شہر سے گزرتے ہیں تو ان سے پتھر سڑک پر گرتے ہیں جس کی وجہ سے حادثات معمول بن گئے ہیں ،ان ضمن میں متعلقہ محکمہ کو متعدد بار آگاء کیا تاہم انہوں نے کوئی دلچسپی نہیں لی۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.