جہلم

جہلم میں چینی آٹا کی سرکاری نرخوں پر دستیابی شہریوں کے لئے خواب، سہولت بازار میں چینی نایاب

جہلم: شہر اور گردونواح میں چینی آٹا کی سرکاری نرخوں پر دستیابی شہریوں کے لئے خواب ، سہولت بازار میں چینی نایاب ، عام بازار میں 100 تا110 روپے فی کلو چینی کی فروخت جبکہ سہولت بازار میں سرکاری نرخ 865 روپے میں فروخت ہونے والا آٹا ناقص ترین ہونے پر شہری عام مارکیٹ سے 1020 روپے کاآٹاخریدنے پر مجبور ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق حکومت پنجاب کی جانب سے مہنگائی کنٹرول کرنے اور غریب عوام کو ریلیف دینے کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ، شہر سمیت نواحی علاقوں میں چینی، آٹاکی سرکاری نرخوں سے زائد قیمت پر فروخت جاری ہے ، چینی جس کی سرکاری قیمت 84 روپے فی کلو مقرر کررکھی ہے۔

سہولت بازار میں چینی نایاب ہونے کے باعث عام بازار میں100 تا110 روپے فی کلو کے حساب سے فروخت کی جارہی ہے جبکہ سہولت بازار میں سرکاری نرخ 865 روپے میں فروخت ہونے والا آٹا انتہائی ناقص و مضر صحت ہونے کے باعث شہری عام مارکیٹ سے 1020 روپے تک مہنگے داموں خرید کر استعمال کرنے پر مجبور ہیں۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ حکومت جب بھی مہنگائی پر کنٹرول کرنے سمیت گرانفروشوں کے خلاف کارروائی کرنے کا اعلان کرتی ہے مہنگائی پہلے سے بھی زیادہ بڑھ جاتی ہے اور اشیائے خوردونوش کا معیار بھی ناقص ہوجاتا ہے جبکہ انتظامیہ خاموش تماشائی کا کردار ادا کررہی ہے۔

شہریوں نے چیف جسٹس آف پاکستان ، وزیراعظم پاکستان سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیاہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button