مغلیہ تنظیم ضلع جہلم کے زیراہتمام کل پاکستان مغل کنونشن کا انعقاد

0

پڑی درویزہ: پاکستان بھر میں قیام پذیر مغل برادری کو ایک پلیٹ فارم پر جمع ہوکر تزک بابری میں ظہیر الدین بابر کے مرتب کردہ آئین کی روشنی میں مغل برادری کی فلاح بہبود و ترقی کے لیے مشترکہ اقدامات کرنا ہوں گے ۔ فلاحی پروگرام میں مغل برادری کی ضرورت مند خواتین کے لیے مناسب رشتوں کا انتظام ، مستحق مغل پاکستانیوں کی بیٹیوں کی شادیوں کا اہتمام ،مفت علاج معالجہ کی سہولیات کے اقدامات ، بے روزگار مغل نوجوانوں کے لیے بے روزگاری الاؤنس کا انتظام جیسے پروگرام شامل ہو سکتے ہیں ۔ کل پاکستان مغل کنونشن ضلع جہلم کے اختتام پر مشترکہ اعلامیہ ۔

تفصیلات کے مطابق مغلیہ تنظیم ضلع جہلم سے زیر اہتمام کل پاکستان مغل کنونشن زیر انتظام ندیم ساجد مغل اور میاں نعیم بشیر منعقدہوا ۔ کنونشن میں پاکستان کے طول و عرض میں رہائش پذیر مغل خاندانوں کے نمائندگان نے شرکت کی ۔ مغل برادری سے تعلق رکھنے والے ممبران اسمبلی ، صوبہ سندھ سے ڈاکٹر مرتضیٰ مغل ، معروف لوک فنکار عالم لوہار کی بیٹی جیسے افراد بھی شامل تھے ۔

کنونشن سے خطاب کرنے والے مقررین نے زور دیا کہ پاکستان بھر میں قیام پذیر مغل برادری کو ایک پلیٹ فارم پر جمع ہوکر تزک بابری میں ظہیر الدین بابر کے مرتب کردہ آئین کی روشنی میں مغل برادری کی فلاح بہبود و ترقی کے لیے مشترکہ اقدامات کرنا ہوں گے ۔ فلاحی پروگرام میں مغل برادری کی ضرورت مند خواتین کے لیے مناسب رشتوں کا انتظام ، مستحق مغل پاکستانیوں کی بیٹیوں کی شادیوں کا اہتمام ،مفت علاج معالجہ کی سہولیات کے اقدامات ، بے روزگار مغل نوجوانوں کے لیے بے روزگاری الاؤنس کا انتطام جیسے پروگرام شامل ہو سکتے ہیں ۔

مغلیہ تنظیم ضلع جہلم کی طرف سے عمران اسلم مغل اور عامر سلیم میر کی سرپرستی میں ایک فلاحی کمیٹی تشکیل دی گئی ۔مشترکہ طور پر تنظیم کی طرف سے اعلان کیا گیا کہ بیان کردہ سہولیات کی فراہمی کے لیے ملک بھر سے ضرورت مند مغل خاندان تنظیم سے رابطہ کر سکتے ہیں ۔ یاد رہے کہ اس کنونشن میں ضلع جہلم کی چاروں تحصیلوں پنڈ دادن خان ، جہلم ، دینہ اور سوہاوہ سے مقامی مغل اراکین نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔

سوہاوہ سے مغلیہ تنظیم کے سرپرست اعلیٰ مرزا عبدالغفار ، تحصیل کوارڈینیٹر ملک عدنان مغل ، مرزا بلال، مرزا نعمان مغل اور چاچو سعید مغل کی قیادت میں ایک بڑا جلوس کل پاکستان مغل کنونشن ضلع جہلم میں شریک ہوا ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.