پنڈدادنخان

خاتون کا شوہر اور بچوں کے ساتھ مل کر سابقہ ساس پر وحشیانہ تشدد،گھر پر زبردستی قبضہ کر لیا

پنڈدادنخان کے علاقہ چکری کرم خان میں ظلم کی انتہاء، سابقہ بہو جائیداد کے لالچ میں اندھی ہوگئی، شوہر اور بچوں کے ساتھ مل کر بزرگ ساس پر وحشیانہ تشدد،گھر سے نکال کر زبردستی قبضہ کرلیا، بیوہ بزرگ خاتون دوسروں کے گھروں میں رہنے پر مجبور ہوگئی، دادرسی کے لیے ایس ایچ او کو بھی درخواست دی لیکن تھانہ جلالپور شریف کی پولیس ظالموں کی سر پرستی کرنے لگی ، معمر خاتون کی انصاف کے لیے دہائی۔

تفصیلات کے مطابق پنڈدادنخان کے علاقہ چکری کرم خان تھانہ جلالپور شریف کی حدود میں بزرگ خاتون انار بی بی بیوہ گلاب کی سابقہ بہو نے جائیداد کے لالچ میں اپنے شوہر اور اپنے بچوں کے ساتھ مل کر اپنی بزرگ ساس انار بیگم پر تشدد کرتے ہوئے گھر سے نکال دیا اور زبردستی گھر پر قبضہ بھی کرلیا۔

انار بی بی نے دادرسی کے لیے تھانہ جلالپور شریف میں درخواست دی جس پر پولیس نے کوئی کاروائی نہ کی۔

انار بی بی نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میرا ذاتی مکان چکری کرم خان میں ہے اور میرا بیٹا بھی فوت ہوگیا ہے جس نے اپنی زندگی میں اپنی بیوی زبیدہ بیگم کو طلاق دے دی تھی جس کے بعد زبیدہ بیگم نے میں منڈی بہاؤالدین کے محمد ندیم نامی شخص سے شادی کرلی اور عرصہ دراز سے منڈی بہاؤالدین میں ہی رہائش پذیر تھی۔

متاثرہ خاتون نے بتایا کہ زبیدہ بیگم نے اپنے دوسرے شوہرکے ساتھ مل کر مجھ پر قاتلانہ حملہ کیا اور تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے مجھے گھر سے نکال دیا اور اب میں دوسرے لوگوں کے گھروں میں رہنے پر مجبور ہوں زبیدہ اور اس کے شوہر نے مقامی پولیس کی آشرباد سے مجھے گھر سے نکال کر میرے مکان پر زبردستی قبضہ کرلیا۔

انہوں نے کہا کہ میری اعلی حکام سے اپیل ہے کہ میری دادرسی کی جائے اور مجھے انصاف دلایا جائے اور اس معاملے میں ملوث پولیس اہلکاروں کے خلاف محکمانہ کاروائی عمل میں لائی جائے تاکہ مجھے انصاف ملے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close