افسوس کہ ہندورکن اسمبلی نے شراب پر پابندی اورمسلمان اراکین نے مخالفت کردی۔سفیرحمزہ طاہر

0

ڈومیلی: بڑاافسوس ہواکہ ہندورکن اسمبلی نے شراب پر پابندی لگانے کابل پیش کیامسلمان اراکین اسمبلی نے مخالفت کردی۔

ان خیالات کا اظہار جماعت اسلامی یونین کونسل اڈرانہ کے رہنماسفیر حمزہ طاہر نے اخبارنویسوں سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہاکہ قومی اسمبلی میں پاکستان تحریک انصاف کے اقلیتی رکن نے شراب پر پابندی کے حوالے سے پیش کردہ بل کی حکومت اور اپوزیشن نے مخالفت کی صرف متحدہ مجلس عمل نے حمایت کی۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں افسوس ہواکہ اسلامی ملک پاکستان کی اسمبلی میں ایک ہندو رکن شراب پر پابندی کابل پیش کر رہاہے جبکہ اس اسلامی ملک کے ارکین اسمبلی اس کی مخالفت کررہے ہیں اورہم اس ہندورکن اسمبلی کوسلام پیش کرتے ہیں جس نے اقلیتی ہوتے ہوئے بھی شراب پر پابندی کیلئے بل پیش کیا۔

انہوں نے کہا کہ اسلامی ملک کے ممبران کو خود چاہیے تھا کہ یہ بل پیش کریں ،آپ کو مسلمان کہلانے کا حق بھی نہیں رہا، کیوں کہ یہ سب شراب پیتے ہیں اگر پابندی لگ گئی تو ان کے کاروبار ٹھپ ہوجائیں گے، ہمارے منسٹر ٹاک شومیں آکرکہتے ہیں اس نے شہرت پانے کیلئے یہ بل پیش کیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.