جہلماہم خبریں

جہلم پولیس کی کامیاب کارروائیاں، اندھے قتل اور اقدام قتل کے ملزمان گرفتار

جہلم: حنا منوراے ایس پی / ایس ڈی پی اوصدر سرکل کی سربراہی میںتھانہ صدرجہلم پولیس کی کامیاب کارروائیاں جاری،اندھا قتل ٹریس کر کے ملزم گرفتار،ایک اور کارروائی میں اقدام قتل کے دوملزمان گرفتار، دونوں مقدمات میں ملزمان کو 7دنوں میں گرفتار کیا گیا۔
تفصیلات کے مطابق محمد آصف ولد مہدی خان سکنہ ٹویہ عثمان ڈاکخانہ سیکریالہ تحصیل کھاریاں ضلع گجرات حال مقیم کوٹلی اللہ یار جہلم نے بحالت مضروبی 7 جون کو بیان دیا کہ میں اپنے بھائی علی شان کے ساتھ مزدوری کر کے واپس گھر بسواری موٹرسائیکل نمبریJML-2629ہنڈا 70CCجا ر ہے تھے کہ جب عائشہ کلینک کے پاس نزد شتر مرغ پلاٹ بوقت8:20 بجے رات پہنچے تو دونامعلوم نوجوان لڑکے بسواری موٹر سائیکل نامعلوم نمبری آئے ،ہمیں روکا اور ایک لمبے قد والے لڑکے نے پسٹل 30بور سے فائر سیدھا مجھ پر کیا جو مجھے سامنے چھاتی پرلگا۔
انہوں نے بتایا کہ مجھے بذریعہ ریسکیو1122سول ہسپتال جہلم لایا گیا۔جس پر مقدمہ نمبر234/19مورخہ7 جون بجرم324/34ت پ تھانہ صدر جہلم درج ہوا۔بعد ازاں مورخہ12.06.19 کو محمد آصف زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرہسپتال راولپنڈی میں جاں بحق ہوگیا۔
اس سنگین نوعیت کے مقدمہ میں نامعلوم ملزمان کی گرفتاری کیلئے کیپٹن (ر) سید حماد عابد ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر جہلم نے حنامنوراے ایس پی / ایس ڈی پی اوصدر سرکل کی سربراہی میں ایک ٹیم تشکیل دی جس میں انسپکٹر محمود حسین ایس ایچ او تھانہ صدر،ایس آئی طارق محمود،عابد حسین 457/Cشامل تھے۔
مقدمہ میں شمشاد اسلم ولد محمود اسلم قوم گجر ساکن مرزا طاہر تحصیل کھاریاں ضلع گجرات حال مقیم کھرالہ کو شامل تفتیش کیا جس نے دوران تفتیش بتلایا کہ میں برادرم حقیقی اعتزاز اسلم عرف بھولہ مستری،محمد آصف مرحوم اور محمد آصف کا بھائی علی شان اور محمد افضل ولد نور داد قوم گجر ساکن کوہلیاں تحصیل کھاریاں ضلع گجرات حال مقیم عقب ڈگری کالج جہلم سب نے مل کر راجہ محمد جاوید ساکن بلال ٹاؤن کی کوٹھی کا ٹھیکہ لے رکھا تھا جو تعمیر کررہے تھے کہ مورخہ7 جون کو میں،برادرم حقیقی اعتزاز اسلم عر ف بھولہ مستری اور آصف مرحوم زیر تعمیر کوٹھی میں کام پر موجود تھے کہ میں نے افضل کو کہا کہ محمد آصف کے آپ کی بیٹی کے ساتھ ناجائز تعلق ہیں۔جس پر محمد افضل نے اشتعال میں آکر پسٹل30بور سے فائر کر کے محمد آصف کو شدید مضروب کردیا اور خود موقع سے فرار ہوگیا۔
انہوں نے بتایا کہ میں نے بذریعہ فون محمد آصف کے بھائی علی شان کو اطلاع دی جو موقع پر آگیا ۔جو ہم سب نے ملکر آصف کو اٹھا کر گلی میں لے آئے اور ڈرامہ رچایا کہ نامعلوم افراد فائر مارکر بھاگ گئے ہیں۔محمد افضل مقتول محمد آصف کا ماموں زاد بھائی ہے جس کوتھانہ صدر پولیس نے اپنی تحویل میں لے لیا ہے۔جو کہ قبل ازیں ڈکیتی ، قتل جیسے سنگین نوعیت کے مختلف مقدمات میں 5سال جیل رہ چکا ہے۔
مقدمہ نمبر235مورخہ08.06.19بجرم 324/147/149ت پ تھانہ صدر،بیان ازاں مالم خان ولد محمد غوث قوم پٹھان ساکن حال مقیم برنالہ ضلع بھمبر آزاد کشمیرنے بیان کیا کہ میں آزاد کشمیر میں رہائش پزیر ہوں میرے بھانجے مولا داد ولد شاہ حسین ساکن برنالہ کی شادی اپنے ماموں کی بیٹی کے ساتھ چک براہم ہوئی جس کی بیوی ایک سال سے ناراض ہوکر میکے آئی ہوئی تھی۔ جس کی صلح کیلئے شیرا خان جو کہ مولا داد جو کہ مولاداد کا سسر ہے بذریعہ فون چک بہرام بلایا ہوا تھا۔
میں میرے برادرم حقیقی عطا خان،عامر خان اپنے بھانجے مولا داد کے ساتھ چک بہرام شیرا خان کے گھر آئے،بات چیت کی اور صلح نہ ہونے کی وجہ سے واپس جارہے تھے کہ بوقت قریب10بجیدن قبرستان کے قریب تھڑا دئے ملزمان1)شیرا خان ولد مادا خان قوم پٹھان ساکن چک بہرام جہلم مسلح پسٹل2)نور الحق قوم پٹھان ساکن چک بہرام جہلم مسلح پسٹل3)فضل الحق ولد شیرا خان قوم پٹھان ساکن چک بہرام جہلم مسلح ڈنڈا اور 6/7نامعلوم اشخاص کھڑے تھے۔جنہوں نے ہمیں جان سے مارنے کی نیت سے ایک فائر نورالحق نے میرے بھانجے مولاداد پر کیا جو سیدھا پیٹ پر لگا۔جس سے وہ زخمی ہوگیا۔جس کو ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال جہلم لے آئے۔ اس پراے ایس آئی اظہر اقبال نے مقدمہ نمبر235مورخہ08.06.19بجرم 324/147/149ت پ تھانہ صدر درج کیا۔
سنگین نوعیت کے اس مقدمے میں ملزمان کی گرفتاری کیلئے کیپٹن (ر)سید حماد عابد ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر جہلم نے حنا منور اے ایس پی / ایس ڈی پی او صدر سرکل کی سربراہی میںانسپکٹر محمود حسین ایس ایچ او تھانہ صدر،ظہیر الدین بابرایس آئی انچارج چوکی کالا گوجراں اور اظہر اقبال اے ایس آئی چوکی کالاگوجراں پر مشتمل ایک ٹیم تشکیل دی جنہوں نے نورالحق، فضل الحق اور شیرا خان تینوں ملزمان کو 7دن کے اندر گرفتار کرلیا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button