بازاروں میں گراں فروشی اور ناپ تول میں ہیرا پھیری انتظامیہ کی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ شہری حلقے

0

جہلم: شہر سمیت گردونواح میں قائم بازاروں میں گراں فروشی اور ناپ تول میں ہیرا پھیری انتظامیہ کی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے، اندرون شہر کے بازاروں میں پرائس کنٹرول کمیٹیوں کی عدم دلچسپی کی وجہ سے ناپ تول میں کمی اور ناقص اشیاء کی فروخت معمول بن چکی ہے، عوام کمر توڑ مہنگائی میں سستی اشیاء خریدنے کی بجائے درجہ دوئم اور درجہ سوئم کی اشیاء درجہ اول کے نرخوںپر خریدنے پر مجبور ہیں۔

ان خیالات کا اظہار شہر کی سماجی رفاعی ، فلاحی ، مذہبی ، شہری تنظیموں کے عمائدین نے اخبارنویسوں سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان مہنگائی مافیا کے خلاف کارروائی کرنے کی باتیں تو کررہے مگر عملی طور پر اقدامات کرنے سے قاصر ہیں جو قوم کیلئے باعث تشویش ہے۔

انہوں نے کہا کہ شہر میں آبادی کے لحاظ سے یوٹیلیٹی سٹورز کی تعداد آٹے میں نمک کے برابر ہے مگر بدقسمتی سے یوٹیلیٹی سٹورز پر اشیائے ضروریہ کی عدم دستیابی حکمرانوں کے دعووں کی نفی کررہی ہے۔شہری بازاروں اور یوٹیلیٹی سٹورز کے نام نہاد ریلیف سے مایوس ہوچکے ہیں اور حکومت کی ناکام پالیسیوں کی وجہ سے اذیت میں مبتلا ہیں۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکمرانوں نے مہنگائی اور بے روزگاری کے سونامی سے غریب اور سفید پوش طبقات کو زندہ درگور کردیا ہے۔لوگ فاقہ کشیوں پر مجبور ہو کر خود کشیاں کررہے ہیں ، مگر بے حس حکمران طبقہ تقریروں اور جھوٹے وعدوں کے سوا عملی طور پر اقدامات کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکا ہے۔

شہریوں نے کہا کہ جہلم سمیت ملک میں بدترین معاشی صورتحال اور کمر توڑ مہنگائی نے قوم کو مایوسی کے اندھیروں میں ڈبورکھا ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.