جہلم

گورنمنٹ کالج برائے خواتین میں جشن آزادی شایان ِ شان اور قومی جوش و جذبے سے منایا گیا

جہلم: گورنمنٹ کالج برائے خواتین میں 71 واں جشن آزادی شایان ِ شان اور قومی جوش و جذبے سے منایا گیا ، کالج میں شجر کاری مہم کا بھی آغاز کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ کالج برائے خواتین میں 71 واں جشن آزادی بھرپور طریقے سے منایا گیا ، تقریب کا آغاز قومی پرچم لہراکر کیا گیا ، گورنمنٹ کالج برائے خواتین کی پرنسپل پروفیسر ثمینہ ضیاء نے اپنے خطاب میں کہا ہے کہ مملکت خداداد پاکستان لازوال قربانیوں سے حاصل کیا جو کہ تاقیامت قائم دائم رہے گا،تاریخ عالم اسلام کے اوراق پر جرات و استقلال عزم استقامت ،عزیمت ،ایثار و قربانی کے ساتھ ساتھ کامیابی و کامرانی کی جتنی ولولہ انگیز داستانیں رقم ہیں ان کے پس پردہ کسی نہ کسی نظریے کی کارفرمائی نظر آتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کا معرض وجود میں آنا نظریہ پاکستان کا مرہون منت ہے دو قومی نظریہ جداگانہ قومیت کا نظریہ مسلمانوں کی الگ تہذیب ،ثقافتی تشخص کا نظریہ سب اسی نظریے کے مختلف نام ہیں جو اسلام کے نام سے معروف ہے اور جس کی بنیاد کلمہ طیبہ پر قائم ہے ، آج ہم 71 واں یوم آزادی اس عز م کے ساتھ منا رہے ہیں کہ ہم اس نظریے کی پاسداری کریں گے قائد اعظم محمد علی جناح نے مسلمانوں کے لیے علیحدہ ملک حاصل کرنے کے لیے بہت جدوجہد کی قائداعظم محمد علی جناح کے شانہ بشانہ بچے، بوڑھے،جوان،خواتین نے بے پناہ قربانیاں دیں جس کی وجہ سے ملک پاکستان معرض وجود میں آیا، آج پاکستان کے عوام مذہبی آزادی کے ساتھ سکھ کا سانس لے رہے ہیں۔

اس موقع پر محترمہ پروفیسر رعنا گل ، محترمہ پروفیسرعظمیٰ ارشد، محترمہ پروفیسرتبسم آراء، محترمہ پروفیسرگل زریں ملک، محترمہ پروفیسر ندیمہ امتیاز، محترمہ پروفیسر فوزیہ کاظم،محترمہ مبشرہ شاہین گوندل،محترمہ ارجمند زاہرہ، محترمہ صائمہ اصغر ، محترمہ رخشندہ ، سمیت دیگر اساتذہ کرام اور کلریکل سٹاف نے شرکت کی ، تقریب میں قومی نغمے اور تقاریر پیش کی گئیں ، تقریب کا اختتام دعائیہ کلمات سے کیا گیا ،اس موقع پر کالج میں شجر کاری مہم کو عملی جامہ پہناتے ہوئے پرنسپل سمیت اساتذہ کرام نے اپنے ہاتھوں سے پودے لگائے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button