جہلماہم خبریں

سی سی ٹی وی کیمرے کارگر ثابت نہ ہو سکے، جہلم میں دن دیہاڑے شہری لٹ گیا

جہلم: سی سی ٹی وی کیمرے کارگر ثابت نہ ہو سکے، تھانہ سول لائن کے علاقہ ڈھوک جمعہ میں راہزنی کی ایک اور واردات ، ڈکیتی ، چوری ، راہزنی کی وارداتوں میں اضافہ، شہری خوف وحراس میں مبتلا، مشین محلہ کے رہائشی میاں بیوی کو نقدی و قیمتی اشیاء سے محروم کر دیا گیا، بینک ڈکیتیوں میں ملوث گروہ بھی گرفتار نہ ہو سکا، پولیس کی کارکردگی سوالیہ نشان بن گئی ، شہری راتیں جاگ کر گزارنے پر مجبور۔

تفصیلات کے مطابق مشین محلہ نمبر 3 کے رہائشی عمر فاروق نے تھانہ سول لائن میں درخواست دیتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ میں اپنی بیوی کے ہمراہ رات 11 بجے اپنے سسرال ڈھوک جمعہ جا رہے تھے کہ اسلامیہ سکول کے قریب 2 نامعلوم نقاب پوشوں نے اسلحہ کے زور پر موٹر سائیکل ، نقدی اور طلائی زیورات سے چھین لئے اور موقع سے فرارہونے میں کامیاب ہوگئے۔

2 روز کا وقت گزرجانے کے بعد بالآخر مقدمہ تو درج کر لیا گیا ہے لیکن تاحال نہ تو ملزمان کو گرفتار کیا گیا ہے اور نہ ہی قیمتی اشیاء کی بازیابی ہو سکی ہے۔

شہریوں کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ شہر کو محفوظ بنانے کی غرض سے لاکھوں روپے مالیت کے سی سی ٹی وی کیمرے نصب کئے گئے تاکہ شہر کو سیف سیٹی بنایا جائے لیکن کیمرے بھی کارگر ثابت نہیں ہو رہے ، روزانہ کی بنیاد پر اندرون شہر سمیت مضافاتی علاقوں میں سٹریٹ کرائم ہو رہے ہیں جس کی بنیادی وجہ شہر کے داخلی و خارجی راستوں پر پولیس کی ناکہ بندی کا نہ ہونا ہے۔

شہریوں نے آئی جی پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ ضلع جہلم کو چوروں ، ڈاکوؤں کے چنگل سے آذاد کروانے کے لئے فرض شناس، ایماندار، افسران و اہلکاروں کو تعینات کیا جائے تاکہ چوریوں ، ڈکیتیوں کا سلسلہ رک سکے اور شہری سکون کی نیند سو سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button