جہلماہم خبریں

جہلم اپڈیٹس کی خبر پر فیاض الحسن چوہان کا ایکشن، جہلم جیل میں حوالاتی پر تشدد کرنے والے 3 ملازمین معطل

جہلم: وزیر جیل خانہ جات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے ڈسٹرکٹ جیل جہلم میں ایک انڈر ٹرائل حوالاتی پر تشدد کے واقعے پر فوری ایکشن لیتے ہوئے تین ملازمین کو حوالاتی پر تشدد میں ملوث ہونے پر 90 دن کیلئے معطل کر دیا۔

معطل ہونے والوں میں ڈسٹرکٹ جیل جہلم کے اسسٹنٹ سپرنٹنڈنٹ عامر عباس، چیف وارڈر محمد خالد اور وارڈر اسد عباس شامل ہیں۔

ڈسٹرکٹ جیل جہلم میں قید پنڈ دادنخان کے حوالاتی ملک محمد رفیق کی بیوی نے شوہر محمد رفیق پر جیل میں مخالفین کے کہنے پر جیل ملازمین کی جانب سے تشدد کیخلاف درخواست دی تھی جس کی خبر جہلم اپڈیٹس نے شائع کی تھی۔

وزیر جیل خانہ جات نے جیل سپرنٹنڈنٹ جہلم کے ذریعے دس منٹ کے اندر متاثرہ حوالاتی سے فون پر تفصیلات طلب کیں، فیاض الحسن چوہان نے آئی جی جیل خانہ جات پنجاب کو واقعہ کی تفصیلی انکوائری کا حکم دیا، انکوائری میں حوالاتی پر مخالفین کے کہنے پر تشدد ثابت ہونے پر محکمانہ کارروائی عمل میں لائی گئی، محکمانہ کارروائی پیڈا ایکٹ کے سیکشن 6 کے تحت عمل میں لائی گئی۔

فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ جیلوں میں قیدیوں سے غیر انسانی سلوک کے حوالے سے میری ہدایات بالکل واضح اور دو ٹوک ہیں، کسی بھی قیدی کے ساتھ تشدد اور زیادتی جیسے قبیح فعل کو ہرگز برداشت نہیں کیا جائے گا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button