جہلم

میونسپل کارپوریشن جہلم کی انتظامیہ نیلام شدہ دکانیں حوالے کرنے میں ناکام ہو چکی ہے۔ شیخ عظیم

جہلم کی معروف کارروباری شخصیت شیخ عظیم نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ 25 ستمبر کو میونسپل کارپوریشن نے دکانوں کی نیلامی کی جس میں ،میں نے ڈسپنسری والی دکانیں کرائے پر حاصل کیں میرے علاوہ ذوہیب علی، شیخ خالد، سلیم میر ، سلیم اختراور دیگر کارروباری شخصیات نے بولی میں حصہ لیکر دکانیں کرائے پر حاصل کیں۔ 10 ماہ کا عرصہ گزرجانے کے باوجود میونسپل کارپوریشن کی انتظامیہ دکانیں حوالے کرنے میں ناکام رہی ہے ، جس کی بنیادی وجہ میونسپل کارپوریشن کے بعض افسران و اہلکاروں کی ملی بھگت شامل ہے۔
شیخ عظیم نے کہا کہ 2 کروڑ روپے سے زائد کا سامان منگوا کر گوداموں میں رکھا ہوا ہے کہ میونسپل کارپوریشن دکانیں ہمارے حوالے کرے اور ہم کارروبار شروع کریں۔
انہوںنے کہا کہ گزشتہ روز جہلم سے تبدیل ہونے والے ڈپٹی کمشنر محمد سیف انور جپہ نے ہماری درخواست پر میونسپل کارپوریشن کے شعبہ انکروچمنٹ کے عملے کو دکانیں خالی کروا کے حوالے کرنے کا حکم جاری کیا لیکن متعلقہ عملہ دکانیں خالی کروانے میں بری طرح ناکام رہا۔
انہوں نے کہا کہ اس موقع پر بااثر دکانداروں نے میونسپل کارپوریشن کے عملے کو تشدد کا نشانہ بھی بنایا جس پر کارپوریشن کے عملے نے دکانداروں کے خلاف درخواست بھی تحریری کی لیکن معاملات طے ہونے جانے کے بعد تحریر کی گئی درخواست میونسپل کارپوریشن کے عملے نے تھانے دینے کی بجائے الماری میں محفوظ کر لی ہے۔
متاثرہ کارروباری شخصیات نے کہا کہ پچھلے 10 ماہ سے ہمیں صبح و شام کا لالی پاپ دیا جا رہاہے ،میونسپل کارپوریشن کے قوانین کے مطابق ہم نے پہلے رجسٹریشن کروائی اور اس کے بعد سیکورٹی جمع کروائی 10 ماہ کا عرصہ گزرجانے کے باوجود میونسپل کارپوریشن دکانیں حوالے کرنے میں بری طرح ناکام دکھائی دے رہی ہے ۔
انہوں نے کہا کہ اگر کارپوریشن کے ذمہ داران نے الاٹ کی گئیں دکانیں ہمارے حوالے نہ کیں تو معزز عدالت سے رجوع کریں گے اور انصاف ملنے تک کوششیں جاری رکھیں گے۔
موقف جاننے کے لئے چیف آفیسر میونسپل کارپوریشن سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ پہلا حق ان دکانداروں کا ہے جنہوں نے کارروبارجاری رکھا ہوا ہے اگر وہ مقررکیا گیا کرایہ ادا نہ کریں گے تو نئے بولی میں حصہ لینے والے کارروباری افراد کو دکانوں کا قبضہ دے دیا جائے گا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button