جہلم

جہلم شہر میں درجنوں فلٹریشن پلانٹس دیکھ بھال نہ ہونے سے ناقص پانی فراہم کرنے لگے

جہلم: شہر میں درجنوں فلٹریشن پلانٹس دیکھ بھال نہ ہونے سے ناقص پانی فراہم کرنے لگے، عطیات، خیرات سے لگائے گئے پلانٹس ذمہ دار افراد کی طرف سے لاپروائی کے باعث بیماریاں بانٹنے لگے۔

تفصیلات کے مطابق جہلم شہر میں مختلف سماجی تنظیموں کی جانب سے درجنوں فلٹریشن پلانٹس تو لگادئیے گئے ہیں لیکن ان کی دیکھ بھال کی ذمہ داری کوئی اٹھانے پر تیار نہیں، شہر میں موجود اکثر پلانٹس کی مدت کئی کئی ماہ سے ختم ہو چکی ہے جس کے بعد سے ان پلانٹس کے پانی کی چیکنگ، سسٹم کی تبدیلی کاکوئی انتظام نہ کرنے سے پلانٹس اب صاف پانی کی بجائے بیماریاں بانٹ رہے ہیں۔

شہر میں صرف ایک سماجی تنظیم پلانٹس کی مسلسل دیکھ بھال اور مرمت کا نظام رکھتی ہے جبکہ باقی تنظیموں نے صرف چندہ عطیات فنڈز جمع کرنے کیلئے نام نہاد واٹر فلٹریشن پلانٹس کے منصوبے شروع کر رکھے ہیں اور لاکھوں روپے عطیات لے کر پلانٹ نصب کرنے کے بعد کبھی اس کے فلٹرتبدیل کرنے یا ماہانہ مرمت کی طرف توجہ نہیں دی جاتی اور شہریوں کو صاف پانی کے نام پر آلودہ پانی پلایا جارہا ہے جس کی وجہ سے گردے، معدے اور دیگر بیماریاں تیزی سے پھیل رہی ہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button