حلقہ این اے 67 اور فواد چوہدری کی نمائندگی پر شکایتیں

تحریر: چوہدری زاہد حیات

1

جہلم کے حلقہ این اے 67 کی نمائندگی اب چوہدری فواد کر رہے ہیں جو بلاشبہ پاکستان بھر بلکہ دنیا میں کسی تعارف کے محتاج نہیں ہیں وہ اس حلقے سے اس وقت نا صرف خود کامیاب ہوئے بلکہ جہلم کی ہر نشست پر اپنی پارٹی پاکستان تحریک انصاف کی کامیابی کی وجہ بنے۔ ان کی کامیابی کے ساتھ ہی اس حلقے کی عوام نے ان سے بہت زیادہ توقعات وابستہ کر لیں۔

اس بات کے قطع نظر کے یہ حلقہ پس ماندگی اور مسائل کے انبار میں گھرا ہوا ہے جہلم اور خاص کر این اے 67 کی ایک سڑک بھی درست حالت میں نہیں۔تھل میں پانی کا مسئلہ اتنا شدید تھا کہ پچھلی حکومت میں پانی کے لیے احتجاج کرنے پر 124افراد کے خلاف ایف آئی آر کاٹی گئی۔

پنڈ دادنخان، کھیوڑہ، للِہ بھی پانی اور سیوریج کے مسائل سے دوچار تھے۔تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال میں ڈاکٹروں کی کئی آسامیاں خالی تھیں اور ڈسپنسریاں کا تو اللہ ہی مالک تھا۔ چوہدری فواد جیتے اور ں کی پارٹی مرکز اور صوبے دونوں میں حکومت بنانے میں کامیاب ہو گئی۔اس کے ساتھ ہی حلقے کے عوام کو لگا کہ اب راتوں رات چوہدری فواد ان کے سارے مسائل حل کروا دیں گے جو عملًا شاید ممکن نہیں ہے۔

زمینی حقائق یہ کے حکومت کو اتنی معاشی مشکلات کا سامنا تھا اور ہے کہ ترقیاتی فنڈز تقریباً بند تھے اور اب بھی مکمل شاید جاری نہیں ہو سکے اس کے باوجود چوہدری فواد نے حلقے کے مسائلِ کے حل کے لیے اپنی کوششیں کا آغاز کر دیا اور انھوں نے ایسے کاموں پر فوکس کیا جن کے لیے فنڈز تو نہیں چاہیے تھے لیکن اس حلقے کے لیے بہت اہم تھے سب سے پہلے تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال میں ڈاکٹروں کی کمی پوری کی گئی اور شاید یہ پہلی دفعہ ہوا تھا کہ تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال میں ڈاکٹروں کی کمی پوری ہوئی اس کے علاوہ کھیوڑہ سول ہسپتال کی حالت زار بھی بہتر ہوئی تحصیل پنڈدادنخان کے تمام بنیادی صحت کے مراکز پر بھی کوالفیڈ ڈاکٹر تعینات کر دے گیے ہیں یہ بلاشبہ ایک بڑی کامیابی ہے۔

پانی کے مسائل کے حل کے لیے بھی ممکن وسائل سے بہترین کام کیا گیا۔نا جائز پانی کے کنکشن کاٹے گئے جس سے کھیوڑہ اور تھل میں پانی کی فراہمی بہتر رہی یہ کام اس بات کا بعین ثبوت کہ چوہدری فواد اپنے حلقے کے لیے بہت کچھ کرنا چاہتے ہیں اور کر رہے ہیں اور ان کو اپنے حلقے کی عوام سے تعلق مضبوط ہے۔ چوہدری فواد کی پوری کوشش ہے کہ حلقے میں ایک مسلہ بھی باقی نا رہے لیکن اس کے لیے ان کو وقت دینا ہو گا یہ کام یہ مسائل حل ہو نے میں وقت لیں گے جادو کی چھڑی سے یہ مسائل حل ہو ے والے نہیں اور دوسری بات ان مسائل کو حل بھی چوہدری فواد جیسا باصلاحیت اور حلقے کا درد رکھنے والا شخص ہی کروا سکتا ہے اور انشاء اللہ چوہدری صاحب یہ مسائل حل کروائیں گے ۔

دوسرا بڑا اعتراض یہ ہے کہ حلقے کے عوام سے ان کا رابطہ کم ہے اس بات میں کوئی دو رائے نہیں کہ چوہدری فواد انفرادی طور پر وقت نہیں دے پا رہے۔لیکن ان کے اس مسلئے کو بھی حقائق کی نظر سے دیکھنا ہے حکومتی مصروفیات پارٹی کی مصروفیات میں شاید وہ خود کو بھی نہیں وقت دے پا رہے لیکن اس کے باوجود وہ حلقے کے عوام کے دکھ سکھ میں جہاں تک ممکن ہو شریک ہوتے اور ان کے بھائی فیصل فرید ہر وقت اپنے حلقے کے عوام کے ساتھ رابطے میں ہوتے چوہدری فواد کے سرکاری دفتر میں ان کے پی اے کا عام لوگوں کے ساتھ بہت اچھا بلکہ مثالی برتاؤ ہے۔

حلقے کے ہر فرد کے ساتھ اور اس اچھے اور مثالی برتاؤ کے پیچھے چوہدری فواد کی شخصیت ہے۔وہاں لوگوں کے مسائل خندہ پیشانی اور توجہ سے سنے جاتے اور ان کے حل کی پوری کوشش کی جاتی ہے اور وہاں حلقے کے ہر فرد کو برابر کا عزت واحترام اور توجہ ملتی۔ کیا یہ مثال نہیں ہے کوئی نمایندہ اپنے حلقے کے عوام سے ایسے رابطہ رکھے۔اس کے علاوہ حلقے میں چوہدری اقبال کھوتی بہترین انداز سے کام کر رہے اور بلا تفریق کر رہے چوہدری فواد کے نمائندے کی حیثیت سے اس لیے یہ تصور کرنا یہ سوچنا کہ چوہدری فواد اپنے حلقے اور عوام سے دور ہو رہے بلکہ درست نہیں چوہدری فواد ہی نہ صرف اس حلقے کو پنجاب کا مثالی حلقہ بنائیں گے۔بلکہ انشاللہ ترقی کی نئی منازل چوہدری فواد کی قیادت میں طے ہوں گی ۔

اس حلقے کی عوام اور حلقے کے لیڈر چوہدری فواد کا تعلق مضبوط ہے رہے گا نا عوام چوہدری فواد کو چھوڑ سکتی اور چوہدری فواد اپنے لوگوں سے دور رہ سکتے۔

 

 

 

(ادارے کا لکھاری کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔)
  1. Farasat ali کہتے ہیں

    I am agree hundred percent with u. Weshould give time to Ch fawad. He is doing mush better than rajgan
    We should support fawad
    Ch farasat dhudhi phaphra

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.