دینہ

معاشرے میں عہد کی پاسداری،لین دین میں کھرا پن،راست بازی نا پید ہوتی جا رہی ہے۔ امیر عبدالقدیر اعوان

دینہ: معاشرے میں مجموعی طورپر برائی عام ہو چکی ہے،عہد کی پاسداری،لین دین میں کھرا پن،راست بازی نا پید ہوتی جا رہی ہے ،اس کا واحد علاج یہ ہے کہ گناہوں سے توبہ کی جائے اور نیکی کو عام کرنے کے ساتھ ساتھ اللہ کریم کی عظمت کا شعور عام کیا جائے۔ان خیالات کا اظہار شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ امیر عبدالقدیر اعوان نے ماہانہ روحانی اجتماع کے موقع پر دارالعرفان منارہ میں سالکین کی بہت بڑی تعداد سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،انہوں نے کہا کہ اس وقت لوگوں کے حقوق پامال کیے جا رہے ہیں،کرپشن عام ہے ،سود کھا یا جا رہا ہے اس سب کے نتیجہ میں معاشرے میں فساد کی سی صورت حال ہے جو کہ معاشرے کو برائی کی طرف لے کر جا رہی ہے ،اس سے بچنے کا واحد حل سنت خیرالانعام ﷺ پر عمل کرنا ہے اور اس وقت ضرورت اس امر کی ہے کہ ہم اپنے قلوب پر اللہ اللہ کی ضربیں لگائیںاور اُن کیفیات کو حاصل کریںجو قلب اطہر محمد الرسول اللہ ﷺ سے آرہی ہیں،کیونکہ جب تک دل درست نہیں ہونگے ہمارے اعمال درست نہیں ہو سکتے ،دارالعرفان میں احباب اس لیے جمع ہوتے ہیںکہ ان کی روحانی تربیت کی جاتی ہے ،یہی احباب پھر اپنی عملی زندگی میں بھر پور کردار ادا کرتے ہیں،جس سے معاشرے میں دوسروں کے لیے راحت کا سبب بن رہے ہیں،برائی کے مقابلے میں نیکی کو عام کرنے سے معاشرے میں اچھائی پیدا کی جا سکتی ہے ،اللہ کریم ہمیں صحیح شعور عطا فرمائیں ،آخر میں انہوں نے ملکی سلامتی اور بقا کی اجتماعی دعا فرمائی ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button