ضلع جہلم کے درجنوں ایلیمنٹری اور ہائی سکولوں میں سہولیات کا فقدان

0

جہلم: ضلع بھرکے درجنوں ایلیمنٹری اور ہائی سکولوں میں سہولیات کا فقدان ،صاف پانی، فرنیچر،بیت الخلا ء سمیت درجہ چہارم کی خالی آسامیوں پر بھرتیاں التوا کا شکار۔ سکولوں میں زیر تعلیم طلباء و طالبات پینے کے صاف پانی سے ،جبکہ متعدد سکولوں کے طلبا فرنیچر سے محروم اور بعض سکولوں میں بجلی کی سہولت اور بعض میں بیت الخلا نہ ہونے پر طلبا کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہاہے ۔

تفصیلات کے مطابق ضلع بھر کے پرائمری ، مڈل و ہائی سکولوں میں بنیادی سہولیات کا فقدان ہے ان سکولوں میں پینے کے صاف پانی ، فرنیچرز، بجلی اور بیت الخلاء جیسی بنیادی سہولیات نہ ہونے سے طلباء و طالبات کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اور جن سکولوں میں بیت الخلاء ہیں۔

سینٹری ورکرنہ ہونے کیوجہ سے بیت الخلاء غلاظت و گندگی سے اٹے پڑے ہیں ، جس کیوجہ سے طلباء وطالبات میں موذی بیماریاں جنم لے رہی ہیں، زرائع کے مطابق دیہاتی علاقوں میں قائم اکثر سکولوں میں سینٹری ورکر کی آسامیاں خالی ہونے کیوجہ سے سکول انتظامیہ طلباء و طالبات سے صفائی ستھرائی کا کام لیتے ہیں ۔

اس حوالے سے والدین کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے سہولیات کے فقدان کیلئے ہر سال کروڑوں روپے کے فنڈز جاری کئے جاتے ہیں،جس کے باوجود ضلع بھر کے پرائمری ، مڈل و ہائی سکولوں میں صاف پانی ناپید ہے۔فرنیچر نہ ہونے کے باعث آج بھی سرکاری سکولوں کے طلباء و طالبات شدید سردی کے موسم میں زمین پر بیٹھنے پر مجبور ہیں۔

سکولوں میں بیت الخلاکیلئے سکول ہیڈزکی جانب سے محکمہ تعلیم کو آگاہ بھی کیا جاتارہا لیکن فنڈز منظور نہ ہونے پراکثر سرکاری سکولوں کے طلبا بیت الخلا سے محروم ہیں۔

جہلم کی سماجی ، رفاعی ، فلاحی ، مذہبی تنظیموں کے عمائدین نے حکومت وقت کو اس گھمبیر مسئلے کی طرف توجہ مبذول کروانے کا مطالبہ کیا ہے کہ بنیادی سہولتیں تعلیمی اداروں میں فراہم کی جائیں تا کہ معماروں کا مستقبل سنور سکے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.