جہلماہم خبریں

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کا جہلم جیل کا دورہ،3 قیدیوں کو ذاتی مچلکوں پر رہا کرنے کا حکم

جہلم: ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کا ڈسٹرکٹ جیل جہلم کا دورہ،تین قیدیوں کو ذاتی مچلکوں پر رہا کرنے کا حکم جبکہ خرچہ ڈگری کے مقدمات کو مصالحت کے ذریعے مصالحتی عدالتوں سے حل کروانے کا حکم ۔

تفصیلات کے مطابق ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج جہلم محمد اسلم خان نے سینئر سول جج ایڈمن خرم سلیم مرزا ،سول جج قدیر حسین بٹ کے ہمراہ ڈسٹرکٹ جیل کا دورہ کیا ،اس موقع پر سپرٹینڈنٹ جیل فرخ سلطان نارو بھی ہمراہ تھے۔ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نے جیل کے لنگر خانہ میں کھانے کا معائنہ کیا اور خود کھایا جبکہ جیل کے ہسپتال میں گئے اور قیدیوں کو صحت عامہ کی سہولیات کی بابت قیدیوں سے دریافت کیا۔

اس کے ساتھ ساتھ انہوں نے میڈیکل سٹور کا معائنہ کیا اور اس میں موجود ادویات کی انسپکشن کی انہوں نے خواتین اور بچہ وارڈ کا بھی تفصیلی معائنہ کیا اور جیل کی تمام بیرکس کا معائنہ کیا اور صفائی کے انتظامات دیکھے ۔جبکہ ایڈیشنل سیشن جج چکوال محمد اسلم بھٹی نے بھی ڈسٹرکٹ جیل کا دورہ کیا اور تمام اقدامات کو تسلی بخش قرار دیا۔

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج جہلم محمد اسلم خان نے منشیات کے تین قیدیوں کو ذاتی مچلکے پر رہا کرنے کا حکم دیا جبکہ انہوں نے کہا کہ جن قیدیوں کے بچوں کے خرچے اور خرچہ ڈگری کے مقدمات جو ڈگری ہوئے ہیں انہیں مصالحتی عدالتوں میں بجھوا کر بذریعہ مصالحت ختم کروانے کی حتی المکان کوشش کریں تاکہ یہ لوگ اپنے گھروں میں زندگی بسر کرسکیں۔

انہوں نے سپرٹینڈنٹ جیل کی ذاتی کاوشوں جن میں کمپیوٹر کلاسز کا اجراء ،حفظ قرآن،ناظرہ قرآن اور قیدیوں اور بچوں میں نصابی کتب کی فراہمی کو یقینی بنانے اور انہیں تعلیم سے بہرا ور کرنے پر سپرٹینڈنٹ جیل فرخ سلطان نارو کے مثبت اقدامات کی تعریف کی اور کہا کہ یہ ایک نیکی اور عبادت ہے اسے جاری رکھا جائے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button