پنڈدادنخاناہم خبریں

پنڈدادنخان میں واپڈا کا ناقص ترسیلی نظام، بارش سے متعدد کھمبوں میں کرنٹ آ گئی، 2 بکریاں ہلاک

پنڈدادنخان: تحصیل پنڈدادنخان میں واپڈا کا ناقص ترسیلی نظام، مون سون کی پہلی بارش سے متعدد کھمبوں میں کرنٹ آنے کے باعث دو بکریاں ہلاک، متعدد محلوں میں بجلی کی لٹکتی تاریں کسی بھی وقت بڑے حادثے کا سبب بن سکتی ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق تحصیل پنڈدادنخان میں گزشتہ کئی ماہ سے بجلی کے کم وولٹیج اور لوڈ شیڈنگ کا سلسہ جاری ہے جبکہ ضلع جہلم کے دوسرے بڑے شہر کھیوڑہ کی کرسچن کالونی میں درجنوں گھروں کو بجلی کی سپلائی کے لیے ایک ٹرانسفارمر سے کام چلایا جا رہا ہے جوکہ ناکافی ہے، بجلی کے انتہائی کم وولٹیج اور ٹریپنگ کے باعث لوگوں کا الیکٹرانک کا قیمتی سامان خراب ہورہا ہے۔

ہفتہ کی شام بارش کے باعث جہلم روڈ پر عالیہ فاؤنڈیشن کے قریب کھمبوں میں کرنٹ آنے سے ہزاروں روپے مالیت کی دو بکریاں ہلاک ہوگئیں جبکہ معمولی بارش سے بجلی ٹرپ ولٹج کی کمی سے گھریلو سامان جلنے لگا۔

گزشتہ رات سے پنڈدادنخان اور کھیوڑہ میں بجلی ٹریپنگ اور ولٹج کی کمی سے متعدد اشیاء جل گئیں جبکہ تحصیل بھر کے متعدد محلوں میں لٹکتی بجلی کی تاروں کی وجہ سے کسی وقت بھی بڑا حادثہ رونما ہوسکتا ہے۔

عوامی سماجی حلقوں نے چیئرمین واپڈا اور اعلی حکام سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ کھیوڑہ شہر میں ٹرانسفارمروں کی کمی کو پورا کیا جائے اور پنڈدادنخان شہر میں کئی دہائیوں پرانا بجلی کا ترسیلی نظام انتہائی بوسیدہ اور ناقص ہو چکا ہے جس کی وجہ سے معمولی بارش سے بجلی ٹرپ ولٹیج کی کمی جیسے مسائل کا سامنا ہے۔ ان مسائل کے حل کے لیے فوری اقدامات کیے جائیں اور شہر کو کسی بڑے حادثہ سے محفوظ بنایا جا سکے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close