سرکاری ہسپتالوں کے درجنوں ڈاکٹرز سمیت ڈرگ انسپکٹرز کا غیر قانونی طریقہ سے بیرون ممالک دوروں کا انکشاف

0

جہلم: سرکاری ہسپتالوں کے درجنوں ڈاکٹرز سمیت ڈرگ انسپکٹرز کا غیر قانونی طریقہ سے بیرون ممالک دوروں کا انکشاف ، غیر ملکی سیرسپاٹے کرنے والے ڈاکٹرز اور ڈرگ انسپکٹر نے اپنے پاسپورٹ پر خود کو بزنس مین ظاہر جبکہ سیاحت کے بھاری اخراجات میڈیسن کمپنیوں کے سپرد۔

انتہائی باوثوق زرائع سے معلوم ہوا ہے کہ جہلم شہر و گردونواح کے چھوٹے و بڑے سرکاری ہسپتالوں میں تعینات ڈاکٹروں سمیت بیشتر ڈرگ انسپکٹرز نے امیگریشن ڈیپارٹمنٹ کی آنکھوں میں دھول جھونکتے ہوئے پاسپورٹ پر اپنی شناخت میں خود کو کارروباری شخصیات ظاہر کررکھا ہے اور ان پاسپورٹس پر غیر ملکی دوروں میں سیر و تفریح کے مزے لوٹنے کا سلسلہ پچھلے کئی سالوں سے جاری ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ان مسیحاؤں کے غیر ملکی دوروں اور سیرو تفریح کے بھاری اخراجات مختلف میڈیسن کمپنیوں نے اٹھا رکھے ہیں ، جس کے عوض سرکاری و نجی ہسپتالوں ،پرائیویٹ کلینکوں پر آنے والے مریضوں کو ان کمپنیوں کی مہنگی ادویات لکھنے کے ساتھ شہریوں کو خریدنے پر بھی مجبور کیا جاتا ہے ، اور ان ڈاکٹروں کے بیرون ممالک دوروں کے دوران ہسپتالوں کے تمام تر امور جونیئر ڈاکٹروں کے سپرد کردیئے جاتے ہیں۔جو مریضوں پر تجربے کرکے ہاتھ سیدھے کرتے ہیں ۔

شہریوں نے وزیرا علیٰ پنجاب، صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد سے نوٹس لینے کامطالبہ کیاہے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.