بلال ٹاؤن کی ٹوٹی گلیاں، جگہ جگہ گندے پانی سے اٹھنے والے تعفن کے باعث علاقہ مسائل کا گڑھ بن گیا

0

جہلم: شہر کے گنجان آباد علاقہ بلال ٹاؤن کی ٹوٹی گلیاں ، جگہ جگہ گندے پانی سے اٹھنے والے تعفن کے باعث علاقہ مسائل کا گڑھ بن گیا۔ سیوریج سسٹم نہ ہونے کے باعث گندا پانی خالی پلاٹوں ،سڑکوں سمیت گلیوں میں جمع ہونے کیوجہ سے آبادی میں موجود پلاٹ جوہڑ میں تبدیل ہو نے لگے ، ان جوہڑوں سے اٹھنے والے تعفن کے باعث شہری مختلف قسم کی بیماریوں کا شکار ہو رہے ہیں ۔ کچی اور ٹوٹی پھوٹی گلیوں میں علاقہ مکینوں کا چلنا محال ہو چکا ہے۔

شہر سے ملحقہ آبادیوں میں سیاسی نمائندوں اور ضلعی حکومت کی عدم دلچسپی کے باعث شہری علاقے مسائل کا گڑھ بن چکے ہیں ، ٹوٹی پھوٹی اور کچی سڑکوں پر بارش اور سیوریج کا پانی کھڑا ہونے سے علاقہ مکینوں کا اپنے گھروں سے باہر نکلنا دشوار ہو جاتا ہے ۔ جگہ جگہ گندگی کے ڈھیروں نے ڈیرے جما رکھے ہیں گلیوں و بازاروں میں بکھرے کوڑے کرکٹ کے ڈھیروں اور گندے پانی سے اٹھنے والے تعفن اور بدبونے علاقہ مکینوں کا سانس لینا بھی محال کر دیا ہے۔

سروے کے دوران علاقہ مکینوںکا کہنا تھا کہ منتخب عوامی نمائندوں اور میونسپل کمیٹی کی عدم دلچسپی اور غفلت کے باعث شہری علاقوں میں گندے پانی نے جوہڑوں کی شکل اختیار کر لی ہے کچی سڑکوں پر گندے پانی اور مٹی کے باعث کیچڑ بن جاتا ہے جہاں سے سائیکل ، موٹر سائیکلیں اور شہریوں کا پیدل چلنا مشکل ہوجاتا ہے، جبکہ گندگی کے ڈھیروں اور گندے پانی پر مچھروں اور مکھیوں کی افزائش ہو رہی ہے جس کے باعث علاقہ میں وبائی امراض پھیلنے کا شدید خطرہ لاحق ہو گیا ہے۔

علاقہ مکینوں نے سیاسی نمائندوں اورایڈمنسٹریٹر میونسپل کمیٹی سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ علاقہ مکینوں کو درپیش مشکلات کا نوٹس لیتے ہوئے سڑکوں کی تعمیر ، گندے پانی کی نکاسی اور گندگی کے ڈھیروں کو ختم کرنے کے لئے عملی اقدامات کریںتاکہ علاقہ مکین موذی امراض سے محفوظ رہ سکیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.