جہلم

نئی حلقہ بندیوں میں ضلع جہلم کی صوبائی نشستیں 4 سے کم کر کے 3 کر دی گئیں

جہلم: نئی حلقہ بندیوں میں ضلع جہلم کی صوبائی نشستیں 4 سے کم کرکے 3کر دی گئیں ، جبکہ قومی اسمبلی کی 2نشستیں برقرار رکھتے ہوئے سیٹوں کے تمام پرانے نمبرز مکمل تبدیل کرتے ہوئے علاقوں میں وسیع ردوبدل کر دیا گیا، جس سے تمام سیاسی جماعتیں سراپا احتجاج بن گئی ہیں اور نئی حلقہ بندیوں کو عدالت میں چیلنج کرنے کا اعلان کر دیاگیاہے۔

تفصیلات کے مطابق نئی حلقہ بندیوں میں قومی اسمبلی اور صوبائی اسمبلیوں کے حلقوں کا آغاز تحصیل سوہاوہ سے کیا گیا ہے ، حلقہ این اے 66 میں تحصیل سوہاوہ ، تحصیل دینہ ، قانون گو حلقہ کالا گجراں ، میونسپل کمیٹی جہلم جن میں ووٹرز کی کل تعداد6 لاکھ 76 ہزار5 سو 37 ہے ، جبکہ صوبائی اسمبلی کی سیٹ پی پی25جہلم I میں تحصیل سوہاوہ ، تحصیل دینہ سوائے قانون گو حلقہ دھریالہ شامل ہے اس میں کل ووٹرز کی تعداد4 لاکھ1 ہزار6 سو 8 ہوگئی۔

حلقہ این اے 67 میں تحصیل جہلم سوائے قانون گو حلقہ کالا گجراں ، میونسپل کمیٹی جہلم، تحصیل پنڈدادنخان شامل ہے ، اس حلقہ میں کل ووٹرز کی تعداد5 لاکھ 46 ہزار 1سو 13 ہے۔

پی پی 26 جہلم II میں قانون گو حلقہ دھریالہ ، تحصیل جہلم سوائے قانون گو حلقہ داراپور، پٹوار سرکل جہلم II ، چوٹالہ ممیان جبکہ ووٹرز کی کل تعداد 4لاکھ 6 ہزار 3 سو 12ہے، جبکہ پی پی 27 جہلم III میں قانون گو حلقہ داراپور ، پٹوارسرکل جہلم II قانون گو حلقہ چوٹالہ ، قانو ن گو حلقہ ممیان ، تحصیل پنڈدادنخان اس طرح ووٹرز کی کل تعداد 4لاکھ14 ہزار7 سو30 ہے۔اسی طرح ضلع جہلم کے کل ووٹر کی تعداد 12 لاکھ 22 ہزار 6 سو50 ہے۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ کسی حلقے کا ووٹر 30 دن کے اندر اندر ان حلقہ بندیوں پر تحریری اعتراضات الیکشن کمیشن سیکریٹریٹ اسلام آباد میں جمع کروا سکتا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button