جہلم

میری بہونے گھریلو رنجش پر بلاوجہ مقدمہ درج کرواکے ہماری شہرت کو علاقے میں نقصان پہنچایا ہے۔ محمد فیروز

جہلم: تھانہ صدر کے علاقہ ڈھوک دسوندی کے رہائشی معمر شخص محمد فیروز ولد محمد شریف نے اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ میری بہونے گھریلو رنجش پر بلاوجہ میرے اور میرے 2 بیگناہ بیٹوں کے خلاف مقدمہ درج کرواکے ہماری شہرت کو علاقے میں نقصان پہنچایا ہے۔

متاثرہ شخص نے بتایا کہ اللہ کو حاضر ناظر جان کر کہہ سکتا ہوں کہ میاں بیوی کے اختلافات کے ساتھ ہمارا کوئی واسطہ نہ ہے میں نے اور میری فیملی نے ہمیشہ صلح کا کردار اد ا کیا ہے۔

متاثرہ شخص نے بتایا کہ میری بہو مسمات(ت) نے تھانہ صدر میں درخواست دیتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ 30مارچ بوقت شام 5 بجے گھر میں موجود تھی کہ اس کے خاوند محمد شفیق ہمراہ محمد یاسین ، محمد امین پسران محمد فیروز اور محمد فیروز ولد محمد شریف ہمارے گھر آئے میرا خاوند محمد شفیق دروازے کے باہر کھڑا تھا جبکہ محمد یاسین محمد امین پسران محمد فیروز ،محمد فیروز ولد محمد شریف اندرآگئے اور میرے بیٹے محمد علی جس کی عمر 2 سال 10 ماہ ہے کو زبردستی اٹھا لیا جنہیں روکنے کی کوشش کی مگر وہ بچہ لیکر بھاگنے میں کامیاب ہو گئے۔

محمد فیروز نے کہا کہ ایسا کوئی وقوعہ نہیں ہوا میاں بیوی کی معمولی تلخ کلامی ہوئی جس کو وقوعہ بنا کر ہماری شہرت کو نقصان پہنچانے کی غرض سے مقدمہ درج کروایا گیا جو کہ حقیقت کے برعکس ہے ، معمر شخص نے ڈی پی او جہلم شاکر حسین داوڑ سے مطالبہ کیا ہے کہ واقعہ کی کسی فرض شناس ایماندار افسر انکوائری کروائی جائے اور بے بنیاد درج ہونے والے مقدمے کا اخراج کیا جائے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button