کھیوڑہ میں دن دیہاڑے ڈکیتی، ڈاکوؤں نے 60 کے قریب گاڑیوں کے مسافروں کو لوٹ لیا

0

کھیوڑہ کی پہاڑی ایریے میں وادی توبر تالاب کے پاس دن دیہاڑے ڈکیتی ڈاکووں نے اسلحے کی نوک پرتقریبا 50-60 گاڑیوں کو لوٹا مسافروں سے لاکھوں روپے موبائل اور زیور چھین لیا، ڈاکوؤں نے ڈنڈوں سے مارکرایک ڈرائیور کا بازو توڑ دیا اسی مقام پر آئے ہر دوسرے روز ڈکیتی کی واردات ہو رہی ہے اور ڈاکوؤں نے مسافروں کو لوٹنے کے ساتھ ساتھ ڈنڈوں سے مارنے کی رواج بھی قائم کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق کھیوڑہ سے چوآسیدن شاہ روڈ پہاڑی ایریے میں وادی توبر تالاب کے پاس ڈاکوؤں نے اسلحہ کی نوک پر شام ساڑھے 5 بجے لوڈر و دیگر گاڑیوں کو روک کر مسافروں سے پہلے مو بائل لیے اور پھر مسافروں سے لاکھوں روپے زیور لوٹا اور جن ڈرائیوروں سے پیسے نہیں ملے، انھوں ڈنڈوں سے خوب مارا پیٹا اور طہ کمپنی کے ڈرائیور سے صرف دو سو نکلنے پر ڈرائیور کو شدید مارا اور اس کا ایک بازو توڑ دیا، کچھ ڈرائیور تو خوف کے مارے اپنی اپنی گاڑیاں روڈ پر چھوڑ کر بھاگ نکلے۔

آئینی شایدین نے بتایا کہ ڈاکوؤں نے لوٹنے کے ساتھ ساتھ ڈنڈوں سے شدید مارا اور زخمی کر دیا، اس مقام پر ہر دوسرے روز ڈکیتی ہوتی ہے مگر افسوس کہ اس سے قبل اسی مقام پر جیتنی وارداتیں بھی ہوئی، پولیس نے کبھی بھی کوئی کاروائی کر کے کسی ملزم کو سخت سے سخت سزا نہیں دی اور افسوس کہ پولیس کے علم میں ہے اس مقام پر روڈ کے ساتھ ایک مسافر خانہ بھی ہے اور اردگرد گہرے جنگلی درخت بھی ہیں، ڈکیت واردات کر کے ان جنگلی درختوں سے فائدہ اٹھاتے ہوئے روپوش ہو جاتے ہیں آئے روز وارداتوں کی وجہ سے مسافروں میں شدید خوف و ہراس پھیل گیا ہے۔

عوامی سماجی حلقوں نے عوامی سماجی حلقوں کا آر پی او راولپنڈی ڈی پی او جہلم ڈی ایس پی پنڈدادنخان سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا اور مطالبہ کیا کہ کھیوڑہ پولیس چوکی پر پولیس کی نفری بڑھائی جائے اور آئے روز ڈکیتی کی وارداتوں کی روک تھام کے لیے اس پہاڑی ایریے میں باقاعدہ طور پر ایک چیک پوسٹ بنائی جائے اور پولیس گشت بھی بڑھایا جائے تاکہ مسافر مطمئن ہو کر سفر کر سکیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.