جہلم

ضلع جہلم عطائیوں نے پنجے گاڑ لئے ، نجی ہسپتالوں میں بھی عطائی انسانی جانوں سے کھیلنے لگے

جہلم: شہر سمیت ضلع بھر میں عطائیوں نے پنجے گاڑ لئے ، نجی ہسپتالوں میں بھی عطائی انسانی جانوں سے کھیلنے لگے ، غیر تربیت یافتہ ڈسپنسر اوردرجہ چہارم کے ملازمین آپریشن کرنے میں مصروف ، بلا لائسنس میڈیکل سٹورز ، لیبارٹریاں قائم ہیں۔
تفصیلات کے مطابق جہلم شہر سمیت ضلع بھر کے علاقوں میں غیر تربیت یافتہ عطائی ڈاکٹرز نے کلینکس ، سرجیکل ہسپتال ، میٹرنٹی ہوم، کھول کر کوالیفائیڈ ڈاکٹروں کی موجودگی ظاہر کرکے سادہ لوح مریضوں کو موت بانٹنے کا دھندہ شروع کر رکھا ہے۔
ڈاکٹرز یا سرجنز کی بجائے غیر تربیت یافتہ ڈسپنسر ز، نرسیسز اور ایل ایچ ویز چند ہزار روپے فیس لیکر آپریشن، ڈلیوری اور دیگر چھوٹے موٹے آپریشن کرکے محکمہ صحت کے افسران کو ماموں بنا رہے ہیں بلکہ انکی نااہلی ایڈمنسٹریشن کا بھانڈا بھی پھوڑ رہی ہے۔
اس کے ساتھ ساتھ ضلع بھر کے تمام ڈاکٹرز کے کلینکس پر بھی عطائی ڈاکٹرز دن رات مریضوں کی جانوں سے کھیل کھیل رہے ہیں اصل عطائیت کے گھر پرائیویٹ کلینکس ہیں جو پیسے بچانے کے لئے نا تجربہ کار مڈل اور میٹرک پاس ، ان ٹرینڈ لڑکوں کو بھرتی کرکے انہیں تربیت دیکر عطائی ڈاکٹرز بنارہے ہیں۔
شہری حلقوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب ، وزیر صحت پنجاب، ڈپٹی کمشنر، سی ای او ہیلتھ سے ضلع بھر میں عطائی ڈاکٹروں کے خلاف آپریشن کرنے کا مطالبہ کیا ہے اور کہا کہ پرائیویٹ ہسپتالوں کے ڈاکٹرز کے خلاف بھرپور ایکشن لیا جائے جہاں پر نہ صرف عطائی ڈاکٹرز کام کرتے ہیں بلکہ ان کے کلینکس سے ہی عطائی تربیت لیکر جگہ جگہ عطائی اڈے کھول رہے ہیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button