دینہ

چنگ چی رکشہ سے پرچی وصولی کے باوجود رکشہ اسٹینڈ کی سہولت میسر نہیں

دینہ: چنگ چی رکشہ سے پرچی وصولی کے باوجود رکشہ اسٹینڈ کی سہولت میسر نہیں ،چنگی چی رکشہ سے ٹیکس کی مد میں روزانہ کی بنیاد پر ہزاروں روپے کی آمد ن حاصل کی جاتی ہے ،ڈرائیور بیچارے ٹریفک پولیس کے چالانوں سے تنگ آ گئے۔

تفصیلات کے مطابق دینہ شہر میں دیہاتوں میں آمد و رفت کے لیے رکشہ کی سواری کا استعمال عام ہے جس کے لیے دینہ شہر میں باقاعدہ انتظامیہ کی طرف سے کوئی مخصوص رکشہ اسٹینڈ کی جگہ میسر نہیں ہے جبکہ شہر میں تمام رکشے پرچی ٹیکس روزانہ کی بنیاد پر ادا کرتے ہیں اور گورنمنٹ کو اس سے خاطر خواہ آمدن میں اضافہ ہوتا ہے ،رکشہ اسٹینڈ نہ ہونے کی وجہ سے رکشہ ڈرائیوروں کو مجبوراً منگلا روڈ پر کھڑا ہونا پڑتا ہے جس کی وجہ سے ٹریفک کی روانی میں خلل کے ساتھ ساتھ ٹریفک عملہ کی طرف سے ان کو نہ کھڑا ہونے کی شکل میں معاشی مشکلات کا سامنا بھی کرنا پڑتا ہے۔

رکشہ ڈرائیور ز نے میڈیا نمائندگان سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ اگر ہمیں رکشہ اسٹینڈ مہیا کر دیا جائے تو باقاعدہ نمبر سے ہر دیہات کے لیے ایک دو رکشہ منگلا روڈ پر آئیں اور ٹریفک کی روانی میں بھی مسئلہ نہ بنے جبکہ اس وقت ہمیں ناجائز چالانوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے جبکہ ہم پرچی کی شکل میں روزانہ کی بنیاد پر گورنمنٹ کو ٹیکس ادا کر رہے ہیں۔

رکشہ ڈرائیورز نے ڈپٹی کمشنر جہلم اسسٹنٹ کمشنر دینہ سے مطالبہ کیا ہے کہ دینہ شہر کے لیے رکشہ اسٹینڈ کی منظوری کے ساتھ ساتھ باقاعدہ جگہ دی جائے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button