جہلم

جہلم سے دوسرے شہروں میں چلنے والی ٹرانسپورٹ کے مالکان نے از خود کرائے بڑھا دیئے

جہلم سے دوسرے شہروں میں چلنے والی ٹرانسپورٹ کے مالکان نے از خود کرائے بڑھا دیئے سیکرٹری ڈسٹرکٹ ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی حکومت پنجاب کے مقررہ کردہ کرائے ناموں پر عملدرآمد کروانے میں بری طرح ناکام، مسافر ٹرانسپورٹروں کے ہاتھوں لٹنے پرمجبور، سیکرٹری ڈسٹرکٹ ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی کی کارکردگی پر سوالات اٹھنے لگے۔

تفصیلات کے مطابق جہلم شہر سے مختلف روٹس میں چلنے والی ٹرانسپورٹ کے کرائے مقرر ہونے کے باوجود سیکرٹری ڈسٹرکٹ ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی کرایے ناموں پر عملدرآمد کروانے میں بری طرح ناکام ہو چکی ہے ۔

دوسری جانب سیکرٹری ڈسٹرکٹ ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی زائد کرایہ وصول کرنے والے ٹرانسپورٹروں کے خلاف کسی قسم کی کارروائیاں کرنے سے گریزاں ہے، جس کیوجہ سے ٹرانسپورٹ اتھارٹی کی کارکردگی مشکوک ہو کر رہ گئی ہے ، مسافروں کا کہنا ہے کہ حکومت پاکستان نے 3 مرتبہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں غیر معمولی کمی کی لیکن ٹرانسپورٹر آج بھی من مرضی کے کرایے وصول کرکے شہریوں کی جیبوں پر ڈاکے ڈال رہے ہیں۔

یہاں قابل ذکر بات یہ ہے کہ سابق ڈپٹی کمشنر نے گزشتہ سال 18 مئی کو جو نوٹیفکیشن جاری کیا جس کے مطابق73 پیسے فی مسافر فی کلو میٹر کے حساب کرایہ مقرر کیا گیا تھا۔ جس کے مطابق جہلم سے راولپنڈی 135 کلو میٹر کا کرایہ 106 روپے جہلم سے راولپنڈی سواں فاصلہ 110 کلو میٹر کرایہ 86 روپے، جہلم سے پنڈدادنخان فاصلہ 90 کلو میٹر کرایہ 70 روپے ، جہلم سے لاہور فاصلہ 192 کلو میٹر کرایہ 150 روپے ، جہلم سے گجرات فاصلہ 58 کلو میٹر کرایہ45 روپے مقررکر دئیے گئے ہیں۔

جہلم سے منڈی بہاؤالدین کافاصلہ 48 کلو میٹرکرایہ 38 روپے ، جہلم سے سرگودھا فاصلہ 190 کلو میٹر کرایہ 148 روپے، جہلم سے گجرانوالہ فاصلہ110 کلو میٹر کرایہ 86 روپے، جہلم سے دینہ فاصلہ 18 کلو میٹر کرایہ 14 روپے، جہلم سے ناڑہ فاصلہ 62 کلو میٹر کرایہ 48 روپے ، جہلم تو خلاص پورفاصلہ 40 کلو میٹر کرایہ 31 روپے مقررکر دئیے گئے ہیں۔

جہلم سے سنگھوئی فاصلہ 15 کلو میٹر کرایہ 12 روپے ، جہلم سے چوٹالہ فاصلہ 24 کلو میٹر کرایہ 19 روپے ، جہلم سے داراپور فاصلہ 32 کلو میٹر کرایہ 25 روپے ، جنرل بس اسٹینڈ دینہ سے راولپنڈی( پیر ودھائی ) فاصلہ 105 کلو میٹر کرایہ 82 روپے ، دینہ سے راولپنڈی ( سواں) فاصلہ 85 کلو میٹر کرایہ 66 روپے مقررکر دئیے گئے ہیں۔

دینہ سے میر پور 25 کلو میٹر کرایہ 20 روپے ، دینہ سے پھڈن فاصلہ 75 کلو میٹر کرایہ 59 روپے ، دینہ سے پھڈیال فاصلہ 78 کلو میٹر کرایہ 61 روپے ، دینہ سے اڈرانہ فاصلہ 50 کلو میٹر کرایہ 39 روپے، دینہ سے پاتھ فاصلہ 62 کلو میٹر کرایہ 48 روپے، دینہ سے سلیہال فاصلہ 60 کلو میٹر کرایہ 47 روپے مقررکر دئیے گئے ہیں۔

دینہ سے نگیال فاصلہ 63 کلو میٹر کرایہ 49 روپے، دینہ سے الانگری فاصلہ 57 کلو میٹر کرایہ 44 روپے ، دینہ سے پنڈوری فاصلہ 53 کلو میٹر کرایہ 41 روپے، دینہ سے چکیام جنڈالہ فاصلہ 47 کلو میٹر کرایہ 37 روپے ، دینہ سے بڑا گواہ فاصلہ 60 کلو میٹر کرایہ 47 روپے ، دینہ سے فور پوٹھی فاصلہ 55 کلو میٹر کرایہ 43 روپے ، پھڈیال سے راولپنڈی فاصلہ 172 کلو میٹر کرایہ 134 روپے ، پھڈیال سے لاہور فاصلہ 285 کلو میٹر کرایہ 222 روپے مقررکر دئیے گئے ہیں۔

ڈومیلی سے دینہ فاصلہ 28 کلو میٹر کرایہ 22 روپے جنرل بس اسٹینڈ سوہاوہ نان اے سی سروس سوہاوہ سے ڈھوک بدرفاصلہ 18 کلو میٹر کرایہ 14 روپے ، سوہاوہ سے ڈھوک مکین فاصلہ 15 کلو میٹر کرایہ 12 روپے ، سوہاوہ سے گوجرخان فاصلہ 25 کلو میٹر کرایہ 20 روپے ، جنرل بس اسٹینڈ پنڈدادنخان نان اے سی ، پی ڈی خان سے غریب وال فاصلہ 25 کلو میٹر کرایہ20 روپے ، پی ڈی خان سے بھیرہ فاصلہ 40 کلو میٹر کرایہ 31 روپے مقررکر دئیے گئے ہیں۔

پی ڈی خان سے سرگودھا فاصلہ 100 کلو میٹر کرایہ 78 روپے ، اعوان ٹریول سروس پنڈدادنخان نان اے سی سروس پی ڈی خان سے لاہور فاصلہ 286 کلو میٹر کرایہ 223 روپے ، پی ڈی خان سے چکوال فاصلہ 55 کلو میٹر کرایہ 43 روپے ، پی ڈی خان سے چوآسیدن شاہ فاصلہ24 کلو میٹر کرایہ 19 روپے مقررکر دئیے گئے ہیں۔

پی ڈی خان سے لِلہ ٹاؤن فاصلہ 30 کلو میٹر کرایہ 23 روپے ، پی ڈی خان سے راولپنڈی فاصلہ 165کلو میٹر کرایہ 129 روپے ، پی ڈی خان سے منڈی بہاوالدین فاصلہ 65 کلو میٹر کرایہ 51 روپے ، پاک شیرازی ٹریول پنڈدانخان نان اے سی سروس پنڈدادنخان سے جہلم فاصلہ 90 کلو میٹر کرایہ 70 روپے ، گوندل ٹریول سروس پنڈدادنخان نان اے سی سروس جلالپور شریف سے سرگودھا فاصلہ 142 کلو میٹر کرایہ 111 روپے مقررکر دئیے گئے ہیں۔

گوندل ٹریول سروس پنڈدادنخان نان اے سی سروس جلالپور شریف سے لاہور پرانا کرایہ 700 روپے اب20 فیصد کمی کے بعد 560 روپے، جلالپور شریف سے راولپنڈی کا پرانا کرایہ 550 روپے اب20 فیصد کمی کے بعد 440 روپے ، جلالپور شریف سے فیصل آباد کا پرانا کرایہ 450 روپے تھا اب20 فیصدکمی کے بعد360 روپے ، جلالپورشریف سے سرگودھا کا پرانا کرایہ 300 روپے تھا اب20 فیصد کمی کے بعد240 روپے مقررکر دئیے گئے ہیں۔

یہاں پر قابل ذکر بات یہ ہے کہ کورونا وائرس سے بچاؤ کیلئے ایس او پیز پر عمل درآمد ٹرانسپورٹرز کی ذمہ داری ہے جس پر دور دور تک عملدرآمد ہوتا نظر نہیں آتا۔ گاڑیوں میں مسافروں کوسوار کرنے سے قبل ٹمریچر چیک کرنا ، ماسک پہننا اور سماجی فاصلہ یقینی بنانے کے احکامات انتظامیہ نے تحریری طور پر جاری کر رکھے ہیں۔

سیکرٹری ڈسٹرکٹ ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی ، ٹریفک پولیس سمیت قانون نافذ کرنے والے ادارے ایس او پیز پر عمل درآمد کروانے میں بری طرح ناکام دکھائی دیتے ہیں ۔ ضلع بھر میں کسی بھی جگہ پر ایس او پیز چیک کرنے کے لئے کوئی ادارہ دکھائی نہیں دیتا، جس کیوجہ سے کورونا وائرس پھیل رہاہے ۔

شہریوں نے وزیراعلیٰ پنجاب ، چیف سیکرٹری پنجاب، کمشنر راولپنڈی سے مطالبہ کیاہے کہ پنجاب روڈ ٹرانسپورٹ اتھارٹی کے مقررہ کردہ کرایوں پر عملدرآمد کروانے کے لئے سیکرٹری ڈسٹرکٹ ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی کوپابند بنایا جائے اضافی کرائے اور کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد نہ کرنے والے ٹرانسپورٹرز کے خلاف مقدمات درج کروائے جائیں تاکہ مسافر حکومت کی طرف سے دیئے گئے ریلیف سے مستفید ہو سکیں ۔

متعلقہ مضامین

ایک تبصرہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button