جہلم

شہریوں کی جانب سے غیر سنجیدہ رویہ، جہلم میں کورونا کی تیسری لہر خطرناک صورتحال اختیار کر گئی

جہلم میں کورونا کی تیسری لہر خطرناک صورتحال اختیار کر گئی، شہریوں کی جانب سے ایس او پیز پر عملدرآمد کے لئے غیر سنجیدہ رویہ، اسکولوں میں کورونا کے بڑھتے ہوئے پھیلاؤ پر عوام کو سخت تشویش، اسپتال کے کورونا وارڈز میریضوں سے بھر گئے، انتظامیہ نے متعدد دیگر وارڈز خالی کروا کر کورونا وارڈز میں تبدیل کر دئیے، ایم ایس سول ہسپتال جہلم نے عوام سے سختی سے کورونا سے بچاؤ کے ایس او پیز پر عملدرآمد کی اپیل کر دی۔

ذرائع کے مطابق اب تک کورونا وائرس کی وجہ سے جہلم میں کل 50 اموات ہو چکی ہیں، مزید یہ کہ کورونا وائرس کی تیسری لہر میں اب تک 9 اموات ہوئی ہیں۔ ہسپتال انتظامیہ کے مطابق جہلم میں عوام کی بے احتیاطی سے کورونا کی تیسری لہر خطرناک صورتحال اختیار کرتی جا رہی ہے، جہلم میں اب تک 69 میڈیکل اور پیرا میڈیکل اسٹاف کورونا وائرس سے متاثر ہو چکا ہے۔

جہلم میں کورونا وائرس کی تیسری لہر میں تیزی کی اطلاعات کے بعد عوام کی جانب سے مستقبل کے معماروں کی زندگیاں محفوظ بنانے کے لئے انتظامیہ سے اسکولوں میں چھٹیاں دینے کا مطالبہ زور پکڑتا جارہا ہے۔ ذرائع کے مطابق اب تک جہلم کے کئی اسکولوں میں ٹیچرز اور طلبہ کی کورونا رپورٹ مثبت آنے کی بھی اطلاعات ہیں جس کے بعد انتظامیہ نے 3 اسکولوں کو عارضی طور پر بند بھی کیا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button