جہلم شہر کے تمام بڑے بازار مکمل طور پر قبضہ مافیا کی دسترس میں چلے گئے

0

جہلم: شہر کے تمام بڑے بازار مکمل طور پر قبضہ مافیا کی دسترس میں چلے گئے جن کو واگزار کرانا میونسپل کمیٹی اور انتظامیہ کے بس کی بات نہیں۔

چوک گنبدوالی مسجد، محمدی چوک، قبرستان چوک،جادہ چوک، نیابازار، مین بازار، کناری بازار، راجہ بازار، تحصیل روڈ، ریلوے روڈ، سول لائن روڈ، روہتاس روڈ، اولڈ جی ٹی روڈ، سمیت دیگر چوک چوراہوں میں پھٹہ مافیا اس قدر قابض ہو چکا ہے کہ قبضہ مافیا نے فٹ پاتھوں کے علاوہ سڑکوں پر بھی قبضے کرنا شروع کر دئیے ہیں۔

یہی صورت حال کالا گجراں ،بلال ٹاؤن، روہتاس روڈ، جادہ چونگی، کشمیر کالونی سمیت دیگر بازاروں کی ہے جہاں پر قبضہ مافیا نے اپنے پنجے گاڑھ دیئے ہیں ، جس کیوجہ سے شہریوں کا پیدل چلنا بھی دشوار ہو کر رہ گیا ہے، بازاروں میں قبضہ مافیاکی صورتحال یہ ہے کہ عارضی تجاوزات اس قدر بڑھ چکی ہیں کہ مافیا نے فٹ پاتھوں کے علاوہ سڑکوں کو بھی عارضی دکانوں میں تبدیل کررکھا ہے، تجاوزات کو دیکھ کر ایسے معلوم ہوتا ہے کہ جہلم میں میونسپل کمیٹی نام کی کوئی چیز موجود نہیں۔

شہر بھر میں تجاوزات کی وجہ سے ٹریفک کا جام ہونا روزانہ کا معمول بن چکا ہے ، انتظامیہ او رمیونسپل کمیٹی تجاوزات کے خاتمے میں بری طرح ناکام دکھائی دیتی ہے اور میونسپل کمیٹی کے تمام دعوے ریت کی دیوار ثابت ہورہے ہیں ، جس کی وجہ سے شہری دوہرے عذاب میں مبتلا ہیں۔

تجاوزات کیوجہ سے سیوریج کے لئے بنائے گئے نالوں کا بھی نام و نشان ختم ہو کر رہ گیا ہے، بارشوں کے موسم میں بازار سمیت شہرکے گلی محلے ندی نالوں کی منظر کشی کرنا شروع کر دیتے ہیں اور پانی دکانوں ، سمیت شہریوں کے گھروں میں داخل ہو جاتاہے۔

جہلم کے شہریوں نے کمشنر راولپنڈی، ڈپٹی کمشنر جہلم سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.