جہلم

مریم نواز کی جہلم آمد، ن لیگ دھڑے بندی کا شکار، رہنما کارکنوں کو جمع کرنے میں ناکام، مریم خطاب کئے بغیر روانہ

جہلم: مسلم لیگ (ن) دھڑے بندی کا شکار، (ن) لیگی کارکنوں کو جمع کرنے میں ناکام رہیں، چند درجن کارکنوں کو دیکھ کر مریم نواز بغیر خطاب کئے روانہ ہو گئی، کارکنوں میں مایوسی کی لہر دوڑ گئی ، کارکن قیادت کی طرف دیکھنے لگے۔

تفصیلات کے مطابق جمعہ کے روز پاکستان مسلم لیگ ن کی مرکزی نائب صدر مریم نواز نے جادہ چوک میں کارکنوں سے خطاب کرنا تھا جس کے انتظامات پاکستان مسلم لیگ ن کے مرکزی اسسٹنٹ سیکرٹری جنرل بلال اظہر کیانی نے مریم نواز کے خطاب کے لئے کارکنوں کو جمع کر رکھا تھا۔

پاکستان مسلم لیگ کے مرکزی رہنما سابق ممبر قومی اسمبلی چوہدری خادم حسین ، پاکستان مسلم لیگ ن کے صوبائی رہنما سابق ممبر چوہدری لال حسین ، تحصیل جہلم کے صدر چوہدری راشد گھرمالہ سمیت لیگی قیادت آزاد کشمیر کے حلقہ کھڑی شریف میں ہونے والے جلسے کے سلسلہ میں علی الصبح کھڑی شریف چلے گئے جس کی وجہ سے پاکستان مسلم لیگ ن کے کارکنوں کو شہر ،مضافاتی علاقوں ، گلی کوچوں سے نہ نکالا جا سکا۔

چند درجن افراد جادہ کے مقام پر جمع ہوئے پاکستان مسلم لیگ ن کی مرکزی نائب صدر مریم نواز نے چند سو افراد سے خطاب کرنے کی بجائے خاموشی کو ترجیح دی اور ہاتھ ہلا کر سرائے عالمگیر کی طرف روانہ ہو گئیں ، واقفانِ حال کے مطابق ضلع جہلم میں مسلم لیگ ن 4/5 دھڑوں میں تقسیم ہو چکی ہے۔

گھرمالہ خاندان نے ضلع جہلم میں مسلم لیگ ن کی الگ شناخت قائم کر رکھی ہے جس کیوجہ سے کارکنوں کی کثیر تعداد گھرمالہ خاندان کے فیصلوں پر عملدرآمد کرتی دکھائی دیتی ہے ، اس کی بنیادی وجہ گھرمالہ خاندان کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ وہ شہریوں کی خوشی ، غمی کے موقعوں پر ان کے دکھ سکھ میں برابر کے شریک ہو کر اپنایت کا احساس دلاتے ہیں، جس کیوجہ سے کارکن گھرمالہ خاندان کے ساتھ چلنا اعزاز سمجھتے ہیں۔

گھرمالہ خاندان کے جمعہ کے روز جہلم میں نہ ہونے کی وجہ سے ن لیگی کارکنوں نے عدم دلچسپی کا مظاہرہ کرتے ہوئے جادہ چوک میں جمع ہونے کی بجائے لا تعلقی اختیار کی جس کیوجہ سے پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز بغیر خطاب کئے سرائے عالمگیر کی طرف روانہ ہو گئیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button