جہلم سے اغواء ہونے والے پاکستانی نژاد برطانوی شہری کا کوئی سراغ نہیں مل سکا

0

جہلم: چند روز قبل جادہ سے اغوا ہونے والے پاکستانی نژاد برطانوی شہری کا کوئی سراغ نہیں مل سکا، اہلخانہ غم سے نڈھال، برطانوی شہری مختار زمان کا اغواء ضلعی انتظامیہ کے لیے چیلنج کی حیثیت رکھتاہے۔مذکورہ شخص بنیادی طور پر کالا گجراں کا رہائشی ہے۔

مختار زمان برطانیہ میں عرصہ 40 سال سے گلاسکو شہر میں رہائش پذیر ہے۔ مذکورہ شخص کالا گوجراں کی کشمیری فیملی کا چشم و چراغ ہے۔مختار زمان والدین کی عیادت کے لیے اور سکینہ ویلفیئر ٹرسٹ کے لیے پاکستان آیا ہے۔

یہ امر قابل ذکر ہے کہ اس کے والدین بھی برطانی شہری ہیں۔والدین کی عمر 80سال سے زاہد ہے۔چند روز قبل اس کو جادہ کے مقام سے اغواء کیا گیا ہے۔اہل خانہ کو تاحال اس کی کوئی خبر نہیں ہے۔ یہاں یہ امر باعث توجہ ہے۔کہ ان کا کیس سکینہ ویلفیئر ٹرسٹ کے حوالے سے کورٹ میں مولوی کے خلاف چل رہا ہے۔جس نے سکینہ ویلفیئر ٹرسٹ پر قبضہ کر رکھا ہے۔

خاندانی ذرائع کے مطابق ان کی کسی کے ساتھ بھی دشمنی نہیں ہے، ان حالات میں مختار زمان کا اغواء جہلم کی انتظامیہ پر سوالیہ نشان ہے۔مذکورہ شخص کے والدین عنقریب برٹش ایمبیسی سے بھی رابطہ کرنے والے ہیں۔ کالاگجراں کی کشمیری فیملی نے ڈی پی او جہلم سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنی پروفیشنل صلاحیتوں کو بروئے کار لاکر مختار زمان کو بازیاب کروائیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.