جہلماہم خبریں

جہلم میں سود خور مافیا نے سینکڑوں گھر اجاڑ دئیے، انتظامیہ بااثر سود خور مافیا کے سامنے بے بس

جہلم: شہر وگردونواح میں سود خور مافیا نے سینکڑوں گھر اجاڑ دئیے، سود خوروں کی قسطیں ادا کرتے ہوئے درجنوں افراد قبروں میں پہنچ گئے، اور اب ان کے بچے سود کی قسطیں ادا کر رہے ہیں ،انتظامیہ بااثر سود خور مافیا کے سامنے بے بس ، حکومت سے سود خوروں کے کارروبار کے خلاف قانون سازی کا مطالبہ۔
تفصیلات کے مطابق جہلم شہر اور اس کے مضافاتی علاقوں میں سود خوروں نے ایسا منظم نیٹ ورک قائم کر رکھا ہے ، مجبور افراد جو ایک بار ان کے چنگل میں پھنس جائے پھر جیتے جی اس مافیا سے جان نہیں چھڑا سکتا ، مجبور افراد کی مجبوری کا فائدہ اٹھا کر سود خور سخت شرائط پر رقمیں دیتے ہیں ، 1 لاکھ روپے سود لینے پر سود خور 10 ہزار روپے ماہانہ سود وصول کرتے ہیں۔
سود کی رقوم کی ادائیگی کے وقت شہریوں سے گھروں کی رجسٹریاں، گاڑیوں کے کاغذات وغیرہ وصو ل کر لئے جاتے ہیں۔ اس کے علاوہ لاکھوں روپے کے چیک بھی وصول کرلئے جاتے ہیں اور برقت رقوم واپس نہ کرنے پر سودی رقم تاخیر کا شکار ہونے پر فوری طور پر سود خور مافیا پولیس سے ملی بھگت کر کے مقدمہ درج کروا دیتے ہیں۔
بیشتر مجبور شہری سود کی رقم ادا نہیں کر پاتے اور مجبوراً چیک ڈس آنر ہونے پر جیل کی سلاخوں کے پیچھے چلے جاتے ہیں،اسی وجہ سے غریب اور بے بس افراد مزید مشکلات کا شکار ہو رہے ہیں ، ضلع جہلم میں بیشتر خود کشیوں کی بنیادی وجہ سود خور مافیا کے ظلم و ستم ہیں۔
ضلع جہلم کے تھانوں میں بیشتر مقدمات سود خور مافیا کے اشاروں پر غریب شہریوں کے خلاف چیک ڈس آنر کی صورت میں درج کئے جاتے ہیں،سود پر چند ہزار روپے رقم وصول کرنے پر سود کی رقم ادا کرتے کرتے ایسے افراد قبروں تک پہنچ جاتے ہیں لیکن پھر بھی سود کی رقم دینے والے مرنے پر بھی انکی جان بخشی نہیںکرتے بلکہ ان کی اولاد سے رقم کی واپسی یا طے شدہ شرائط کے مطابق مکان ، گاڑیاں حوالے کرنے کا تقاضا کیا جاتا ہے۔
شہری، سماجی ، رفاعی ، فلاحی تنظیموں کے عمائدین نے اس گھناؤنے کارروبار کے سدباب کے لئے ڈی پی او جہلم سے سود خوروں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button