جہلم

این ایچ اے کے بس بیز کے ٹھیکہ کی مدت ختم ہونے کے باوجود ٹیکس وصولی جاری

جہلم: نیشنل ہائی وے اتھارٹی کے 4 کروڑ سے زائد کے ٹھیکوں پر ٹھیکہ ختم ہونے کے باوجود ٹیکس وصولی جاری، سرکاری خزانے کو روزانہ لاکھوں روپے کا ٹیکہ لگایا جانے لگا، چیئرمین این ایچ اے نے بھی چپ سادھ لی۔

تفصیلات کے مطابق سرائے عالمگیر، کھاریاں ، لالہ موسیٰ کے بس بیز کے ٹھیکہ کی مدت 15 فروری 2018سے 12 سالہ کنٹریکٹ ختم ہونے کے باوجود مارگلہ اور جاگر کمپنیز کے اہلکار پرچی ٹیکس کی وصولی کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں جبکہ این ایچ اے کی جانب سے رواں سال کے ٹھیکے خواجہ وقار اینڈ کمپنی نے 4 کروڑ کے لگ بھگ بولی دے کر حاصل کئے اور رقم بھی خزانے میں جمع کروا دی گئی ، مگر سابق کمپنی نے این ایچ اے کی ملی بھگت سے حکم امتناعی حاصل کرکے دوبارہ پرچی فیس وصولی کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے۔

خواجہ وقار اینڈ کمپنی کااس حوالے سے کہنا ہے کہ 12 سال سے پرچی وصول کرنیوالی مارگلہ اور جاگر کمپنی کا ٹھیکہ رواں برس15 فروری سے ختم ہو چکا ہے ، مگر قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے محکمہ کی ملی بھگت سے مذکورہ کمپنی ہی پرچی وصول کرکے روزانہ لاکھوں روپے سرکاری خزانے کو ٹیکہ لگارہے ہیں ، چیئرمین این ایچ اے سمیت کوئی بھی افسر کارروائی کرنے کو تیار نہیں۔

نئے ٹھیکیدار نے ارباب اختیا رسے نوٹس لینے کا مطالبہ کیاہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button